وزیر اعظم کے پیکیج سے بہتری نہیں آئے گی، مسترد کرتے ہیں،آفاق احمد

     وزیر اعظم کے پیکیج سے بہتری نہیں آئے گی، مسترد کرتے ہیں،آفاق احمد

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مہاجر قومی موومنٹ (پاکستان)کے چیئرمین آفاق احمد نے وزیر اعظم کی جانب سے ٹرانسفارمیشن پیکج کے نام پر گیارہ سو ارب کے اعلان کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اول تو اس رقم سے کراچی میں کوئی بہتری آ ہی نہیں سکتی دوسرے یہ کہ سندھ حکومت کے پہلے سے اعلان کردہ منصوبوں کے 802 ارب اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت شروع ہونے والے منصوبوں کے 198 ارب اگر منہا کردیئے جائیں تو وفاق کا اس پیکج میں حصہ صرف 100 ارب بنتا ہے، کراچی جیسا میگا سٹی جو ملک کا معاشی حب بھی ہے اسکے لئے وفاق کی جانب سے صرف سو ارب مختص کرناکراچی دشمنی کے سوا کچھ نہیں۔آفاق احمد نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کراچی کے معاملے میں پہلے دن سے صرف اعلانات سے کام چلا رہی ہے،وزیر اعظم کو شاید یاد نہ ہوکہ وہ اس سے قبل بھی کراچی کیلئے 162 ارب کا اعلان کر چکے ہیں جس کا آج تک کچھ پتا نہیں چلا۔آفاق احمد نے کہا کہ کراچی کے ٹیکسوں کے پچاس ہزار ارب سے راوی کنارے نیا شہر بسانے والوں کے پاس اگر شہر کیلئے پانچ ہزار ارب بھی نہیں تو پھر وزیراعظم کو کراچی آکر عوام کے زخموں کو کریدنے کی کیا ضرورت تھی۔آفاق احمد نے کہا کہ کسی وفاقی حکومت کی جانب سے صوبوں کے منصوبوں کو اپنے کھاتے میں شامل کرنا پہلی بار دیکھا ہے، وزیر اعظم کو یاد رکھنا چاہیے کہ ترقیاتی منصوبے اور مالیاتی پیکج سڑک کے کنارے لگی تختیاں نہیں ہوتے کہ جسے بدل کر کریڈٹ لے لیا جائے۔آفاق احمد نے کہا کہ حکمرانوں کی غفلت اور لاپرواہی سے کراچی تباہ ہوا جس کا ازالہ اونٹ کے منہ میں زیرہ جیسی رقم سے نہیں ہوسکتا، وفاق کے پاس کراچی کیلئے کچھ نہیں اس لئے شہر کو این ایف سی ایوارڈ میں آبادی اور آمدنی کی بنیاد پر حصہ دے دیا جائے۔آفاق احمدنے کہا کہ وزیر اعظم کے اعلانات نے کراچی کے حوالے سے انکی غیر سنجیدگی عیاں کردی اب شہر کے تمام اسٹیک ہولڈر کو سرجوڑ کر شہر بچانے کیلئے بیٹھنا اور حکمت عملی ترتیب دینا ہوگی کیونکہ کراچی بچانے کیلئے کوئی باہر سے نہیں آئے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ شہر کے مسائل کے حل کیلئے ہم اپنی تجاویز مرتب کررہے ہیں جس پر جلد قوم کو اعتماد میں لیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ آخر -