دوسال سے لاپتہ 2 نوجوان کشمیریوں کی لاشیں برآمد مگر کہاں سے ملیں؟

دوسال سے لاپتہ 2 نوجوان کشمیریوں کی لاشیں برآمد مگر کہاں سے ملیں؟
دوسال سے لاپتہ 2 نوجوان کشمیریوں کی لاشیں برآمد مگر کہاں سے ملیں؟

  

سری نگر(ویب ڈیسک) مقبوضہ کشمیر کے دریائے کشن کنگا سے دو نوجوانوں کی لاشیں ملی ہیں جو دو سال سے لاپتہ تھے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق باندی پورہ میں کشن گنگا دریا سے دو نوجوانوں کی لاشیں ملی ہیں جن کی شناخت نثار احمد اور سمیر احمد ڈار کے نام سے ہوئی ہے۔ یہ دنوں نوجوان بالترتیب 2018 اور 2019 سے لاپتہ تھے۔

کشمیر پولیس کا کہنا ہے کہ نثار احمد ترال ضلع کا رہائشی کا تھا اور دو سال قبل لاپتہ ہوگیا تھا جب کہ سمیر ڈار ضلع پلوامہ کا رہائشی تھا اور ایک سال قبل والدین نے اپنے بیٹے کی گمشدگی کی رپورٹ درج کرائی تھی۔

نوجوانوں کے اہل خانہ نے پولیس میں گمشدگی کی رپورٹ درج کراتے ہوئے بھی خدشہ ظاہر کیا تھا کہ بھارتی سیکیورٹی فورسز نے نوجوانوں کو لاپتہ کیا ہے اور انہیں ماورائے عدالت قتل کردیا جائے گا۔مقامی حریت رہنماو¿ں نے بھی دعویٰ کیا کہ اس بات کا قوی امکان ہے کہ نوجوانوں کو بھارتی فوج کے ٹارچر سیل میں تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہوگا اور دوران حراست ہلاکت پر نوجوانوں کی لاشیں دریا میں پھینک دی گئیں۔

مزید :

قومی -