لڑکی کواس کے خاندان والوں نے ماراہوتاتووہ لڑکے کو بھی نہ چھوڑتے ،سپریم کورٹ کے بیوی کو قتل کرنےوالے شوہرکی درخواست ضمانت میں ریمارکس 

لڑکی کواس کے خاندان والوں نے ماراہوتاتووہ لڑکے کو بھی نہ چھوڑتے ،سپریم کورٹ ...
لڑکی کواس کے خاندان والوں نے ماراہوتاتووہ لڑکے کو بھی نہ چھوڑتے ،سپریم کورٹ کے بیوی کو قتل کرنےوالے شوہرکی درخواست ضمانت میں ریمارکس 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمجرم شبیر عرف شبو کی درخواست ضمانت خارج کردی، عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ اس کیس میں بہت بری تحقیقات ہوئی،لڑکی کواس کے خاندان والوں نے ماراہوتاتووہ لڑکے کو بھی نہ چھوڑتے ،ایسا نہیں ہوسکتا بھائی اپنی بہن کو ماردے اوربہنوئی کو چھوڑ دے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ میں بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمجرم شبیر عرف شبو کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی،وکیل ملزم نے کہاکہ ملزم شبیر اورارشاد بی بی نے پسند کی شادی کی تھی،ارشاد بی بی کے بھائی نے خاندان کی مرضی کیخلاف شادی پر بہن کو قتل کیا۔

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہا کہ اس کیس میں دونوں طرف سے تحقیقات ہونی چاہئے تھی ،لڑکی کی فیملی والوں نے قتل کیایاشوہر نے،کوئی تیسرا نہیں تھا،پولیس والے دونوں طرف سے تحقیقات کیوں نہیں کرتے؟۔

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہاکہ اس کیس میں بہت بری تحقیقات ہوئی،لڑکی کواس کے خاندان والوں نے ماراہوتاتووہ لڑکے کو بھی نہ چھوڑتے ،ایسا نہیں ہوسکتا بھائی اپنی بہن کو ماردے اوربہنوئی کو چھوڑ دے ،عدالت نے بیوی کو قتل کرنے والے شوہرمجرم شبیر عرف شبو کی درخواست ضمانت خارج کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -