کرونا، عوام کی زندگیاں عزیز، کھلاڑی گھروں سے باہر نہ نکلیں، پاکستا ن جوڈوفیڈریشن

کرونا، عوام کی زندگیاں عزیز، کھلاڑی گھروں سے باہر نہ نکلیں، پاکستا ن ...

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر) ڈپارٹمنٹل کرکٹ کے بغیرڈومیسٹک کرکٹ نے ملک کے سینکڑوں کرکٹرزکوبیروزگارکردیا۔ کوروناوائرس سے فرسٹ کلاس کرکٹرزکے مالی مسائل میں بے پناہ اضافہ ہوگیاہے۔ڈومیسٹک کرکٹ سیڈپارٹمنٹل ٹیموں کے خاتمے نے ملک کے سینکڑوں کرکٹرز کوبیروزگارکردیا اورانہیں اپنے اہل خانہ کی روزی روٹی کے لالے پڑگئے ہیں۔کوروناوائرس نے جہاں ہرشعبہ زندگی کوتباہی سے دوچارکردیا ہے۔وہیں کرکٹرز پربھی بیروزگاری کی تلوارتان دی ہے۔اس سال رمضان لیگ کے انعقاد کاکوئی امکان نہیں ہے۔اب تک کسی لیگ نے رجسٹریشن نہیں کرائی اور نہ ہی رمضان میں کوئی لیگ ہوتی نظرآرہی ہے۔پاکستان میں رمضان لیگ میں عوام بہت دلچسپی لیتے ہیں۔

ان میں سے بعض لیگ ٹی وی پر بھی دکھائی جاتی ہیں۔جس سے پلیئرز کوڈیڑھ سے تین لاکھ تک آمدنی ہوتی ہے۔ای سی بی نے انگلش کاؤنٹی 2020نہ کرانے کا فیصلہ کیاہے۔پاکستان کے درجنوں کرکٹر کاؤنٹیز اور انگلش لیگ میں شرکت کرکے بھاری آمدنی حاصل کرتے ہیں جواس سال ممکن نہیں ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -