آئی پی ایل، مہنگے کنٹریکٹس کے باعث آسٹریلوی کھلاڑی کوہلی پر تنقید نہیں کرتے: کلارک

آئی پی ایل، مہنگے کنٹریکٹس کے باعث آسٹریلوی کھلاڑی کوہلی پر تنقید نہیں کرتے: ...

  

کینبرا: (مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا بھر میں کوروناوائرس کے باعث کھیلوں کے تمام مقابلے منسوخ ہو چکے ہیں تاہم 2015ؤرلڈکپ کے فاتح کپتان مائیکل کلارک نے انڈین پریمئر لیگ (آئی پی ایل) کے خلاف بیان جاری کرتے ہوئے نیا پنڈورا باکس کھول دیاہے۔مائیکل کلار ک کا مزید کہنا تھا کہ جب آسٹریلیا کی ٹیم بھارت کے خلاف کھیلتی ہے تو آسٹریلوی کرکٹ میں معمول سے زیادہ نرمی آجاتی ہے اور اس کی وجہ ہے کہ کھلاڑی آئی پی ایل کے ساتھ اپنے کنٹریکٹس کو محفوظ کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا کے کھلاڑی بھی گراؤنڈ میں ویرات کوہلی کو جملے کسنے یا پھر ان کے خلاف جارحانہ انداز اپنانے سے ڈرتے ہیں، ہر کوئی جانتا ہے کہ گیم کے حوالے سے بھارت کے پاس کتنا پیسہ ہے اور وہ کتنا طاقتور ہے۔

، بین الاقوامی سطح پر بھی اور مقامی سطح پر آئی پی ایل کے ذریعے۔ان کا کہناتھا کہ آسٹریلیا سمیت کرکٹ کی دنیا کے دیگر ٹیموں کے کھلاڑی بھی میدان میں کوہلی کو کچھ کہنے سے ڈرتے ہیں کیونکہ انہوں نے ’اپریل‘ میں ان کے ساتھ کھیلنا ہوتا ہے۔

  یاد رہے کہ انڈین پریمئر لیگ سا ل کے مہینے اپریل میں کھیلی جاتی ہے تاہم اس مرتبہ کورونا وائرس کے باعث اسے ملتوی کر دیا گیاہے۔مائیکل کلارک کا بیان ایسے وقت میں سامنے آیاہے جب آسٹریلوی کھلاڑیوں نے انڈین پریمئر لیگ کے ساتھ بھاری رقوم پر مبنی معاہدے کر لیے ہیں۔فاسٹ باؤلر پیٹ کمنز نے آئی پی ایل میں مہنگے ترین باؤلر ہونے کے تمام ریکارڈ توڑ ڈالے ہیں، انہیں کولکتہ نائٹ رائڈرز کی جانب سے 15.5 کروڑ بھارتی روپے میں خریدا گیا ہے۔ان کے علاوہ گلین میکسویل کو آئی پی ایل کی ٹیم کنگز الیون پنجاب نے 10.75 کروڑ جبکہ ناتھن کلٹر نیل کو ممبئی انڈینز نے 8 کروڑ میں حاصل کیاہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -