صوابی میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 8 ہو گئی

  صوابی میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 8 ہو گئی

  

صوابی(بیورو رپورٹ)پاکستان تحریک انصاف ضلع صوابی کے رہنما و سابق ضلعی سیکرٹری اطلاعات شاہ ولی بھی ضلع صوابی کے کورونہ وائرس سے متاثرہ مریضوں میں شامل ہو گئے۔ ان کی ٹیسٹ رپورٹ پازیٹو آگئی۔ شاہ ولی گذشتہ کئی دنوں سے کورونہ وائرس کے خدشے کے پیش نظر چھوٹا لاہور ہسپتال کے قرنطینہ سنٹر میں زیر علاج تھے۔ ڈی سی شاہد محمود نے بتایا کہ اسی طرح ضلع صوابی میں کورونہ وائرس سے تصدیق شدہ متاثرہ مریضوں کی تعداد آٹھ ہو گئی۔ جن میں سے چار متاثرہ مریضوں کو علاج معالجے کے بعد ہسپتالوں سے فارغ کر دیا گیا ہے جب کہ چار مریض جن میں شاہ ولی سکنہ مانیری پایاں، محمد شیر سکنہ جگناتھ اور عبداللہ اور ان کا والد عبدالرازق ساکنان کرنل شیر کلے سرکاری ہسپتالوں میں قائم آئسو لیشن وارڈ میں داخل کر دیا گیا ہے۔ ضلع بھر میں کل 25مشتبہ کیسز رجسٹرڈ ہوئے ہیں جن میں سے آٹھ کی مثبت جب کہ سولہ کے ٹیسٹ نیگیٹو آئے ہیں۔ ڈی سی صوابی شاہد محمود نے ڈی پی او کے ہمراہ متاثرہ مریضوں عبدالرازق اور ان کے بیٹے عبداللہ کے گاؤں کرنل شیر کلے کا دورہ کیا اسی طرح ان کے علاوہ شاہ ولی اور محمد شیر کے گھروں کے ارد گرد لاک ڈاؤن کر کے حفاظتی کٹ کے ساتھ پولیس نفری کو تعینات کر دیا گیا۔ انہوں نے جہانگیرہ پل اور دیگر مقامات پر انٹر ی پوائنٹ اور ناکہ بندیوں کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر انہوں نے پولیس اہلکاروں اور عوام سے اپیل کی کہ وہ ماسک، دستانے، سینیٹائزر کے علاوہ سیکیورٹی فورسز حفاظتی سوٹ کے استعمال کو یقینی بنائے انہوں نے کہا کہ کورونہ وائرس ایک عالمی وباء ہے اس وباء پر قابو پانے کے لئے محکمہ پولیس، محکمہ صحت اور عوام ہر اول دستے کا کر دار ادا کر رہے ہیں عوام محکمہ صحت کے اختیاطی تدابیر اور حکومتی اقدامات پر عملدر آمد کریں ضلع بھر میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے دفعہ 144بدستور جاری ہے۔ غیر ضروری آمدو رفت اور گھروں سے نکلنے میں عوام اختیاط کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -