گنگا رام ہسپتال کرونا کی شکار حاملہ خواتین کیلئے مختص کرنے کا فیصلہ

    گنگا رام ہسپتال کرونا کی شکار حاملہ خواتین کیلئے مختص کرنے کا فیصلہ

  

ٍٍ لاہور(جنرل رپورٹر)وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کرونا وائرس ٹیسٹ کی سہولت بڑھا دی گئی ہے جس کی وجہ سے آئندہ دو ہفتوں میں صوبہ میں کرونا کیسز کی تعداد میں اضافہ ہوگا، لاک ڈاؤن سے فائدہ ہوا ہے۔ سوشل سکیورٹی ہسپتال ملتان روڈ پر کرونا وارڈ کے افتتاح کے موقع پر انہوں نے کہا ہم روزانہ 3 ہزار ٹیسٹ کر رہے ہیں، کرونا سے بچنے کیلئے ماسک ضرور پہنیں، 60 سال سے زائد عمر کے افراد زیادہ متاثر ہوسکتے ہیں۔ پنجاب میں سوشل سیکیورٹی ہسپتال میں بیڈز مختص کر دیئے گئے ہیں، حفاظتی سامان کی فرا ہمی یقینی بنا رہے ہیں۔ پنجاب میں کرونا کے سب سے زیادہ مریض تبلیغی جماعت کے کارکن اور زائرین ہیں، جو حالات نظر آرہے ہیں اس میں مریضوں کی تعداد میں اضافہ دیکھ رہی ہوں، لوگوں سے درخواست کرتی ہوں وہ اپنے گھروں میں رہیں اور احتیاط کریں، اپنے بزرگوں کی صحت کیلئے ان سے فاصلہ اختیار کریں۔ وزیرصحت پنجاب ڈاکٹریاسمین راشد نے سوشل سکیورٹی ہسپتال ملتان روڈپرکروناوائرس کے مریضوں کی سہولت کی خاطربہترین آئیسولیشن وارڈاورجدید طبی سہولیات فراہم کرنے پروزیرمحنت وانسانی وسائل انصرمجیدخان کا شکریہ اداکیا۔ صوبائی وزیرصحت نے سوشل سکیورٹی ہسپتال ملتان روڈکے مختلف وارڈزکادورہ کیا اورطبی سہولیات کاجائزہ لیا۔اس موقع پرسیکرٹری لیبرسارہ اسلم، کمشنرپیسی تنویراقبال اوردیگرافسران بھی موجودتھے۔ وزیرمحنت وانسانی وسائل نے وزیرصحت کوہسپتال میں موجودتمام طبی سہولیات بارے تفصیلات سے آگاہ کیا۔ صوبائی وزیرصحت ڈاکٹریاسمین راشد نے کہاکہ کروناوائرس کے مریضوں کیلئے پچاس بستروں پرمشتمل طبی سہولت فراہم کرنے میں وزیرمحنت انصرمجیدخان کی ذاتی کاوش شامل ہے۔حکومت کوروناوائرس کی وباء پرقابو پانے کیلئے تمام تروسائل بروئے کارلارہی ہے۔ بی ایس ایل تھری لیبزکی سہولت بڑھاکرٹیسٹنگ کی رفتارتیزکرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ڈاکٹریاسمین راشدنے کہاکہ عوام کی زندگیوں کومحفوظ بنانے کیلئے اقدامات اٹھاناحکومت کی اولین ترجیح ہے۔ وزیراعظم عمران خان اوروزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارکوصوبہ بھرمیں کوروناوائرس کے شکارمریضوں کے علاج معالجہ سے لمحہ بہ لمحہ باخبررکھاجارہاہے۔ صوبائی وزیرمحنت انصرمجیدخان نے کہاکہ محکمہ محنت وانسانی وسائل مشکل گھڑی میں محکمہ صحت کے ساتھ مل کرکوروناوائرس کامقابلہ کرے گا۔پنجاب کے تمام سوشل سکیورٹی ہسپتالوں میں آئیسولیشن رومزمختص کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سوشل سکیورٹی ہسپتالوں کومزیداپ گریڈکیاجارہاہے۔کوروناوائرس سے متاثرہ مزدوراوردیہاڑی دارطبقے کی بحالی کیلئے بھی اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔ صوبائی وزیر محنت انصرمجیدخان نے ایمرجنسی کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تمام افسران کو انتہائی محنت اورجانفشانی سے فرائض سرانجام دینے پرخراج تحسین پیش کیا۔قبل ازیں فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی میں اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیرصحت پنجاب ڈاکٹریاسمین راشدنے گنگارام ہسپتال کوکروناوائرس کی شکارحاملہ خاتون مر یضو ں کیلئے مختص کرنے کا فیصلہ بھی کیا۔ اس موقع پر وائس چانسلرپروفیسرعامرزمان خان، ایم ایس گنگارام ہسپتال ڈاکٹراحتشام اورفیکلٹی ممبران نے شرکت کی۔ وائس چا نسلر پرو فیسرعامرزمان خان نے صوبائی وزیرصحت کوگنگارام ہسپتال میں کوروناوائرس کی شکارحاملہ خاتون مریضوں کیلئے فراہم کی گئیں طبی سہولیات اورڈاکٹرزکے ڈیوٹی روسٹرم کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا۔ صوبائی وزیرصحت ڈاکٹریاسمین راشدنے کہا گنگارام ہسپتال میں کوروناوائرس کی شکار ہونیوالی حاملہ خاتون مریضوں کیلئے تمام ترطبی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ کروناوائرس کی شکارحاملہ خاتون مریضوں کاعلاج کرنیوالے ڈاکٹرزاورسٹاف کوماسک، حفاظتی لباس سمیت ہرقسم کی سہولت مہیاکی جائے گی۔ کسی شخص کوکروناوائرس سے شکارحاملہ خاتون مریضوں کے وارڈمیں جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔ وائس چانسلر ا و ر ایم ایس کوروناوائرس وارڈاورآئیسولیشن رومزمیں طبی سہولیات کی نگرانی کریں گے۔ حکومت کروناوائرس سے نمٹنے کیلئے وسائل کودرست سمت میں خرچ کررہی ہے۔ عوام سے کروناوائرس سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیراختیارکرنے کی بارباراپیل کی جارہی ہے۔ عوام گھروں میں محدودہوکراپنے اوراپنے پیاروں کومحفوظ بنائیں۔صوبائی وزیر صحت نے وائس چانسلراورایم ایس کوگنگارام ہسپتال میں کوروناوائرس کی شکارحاملہ خاتون مریضوں کیلئے تمام ترانتظامات فوراً مکمل کرنے کی ہدایت بھی کی۔

یاسمین راشد

مزید :

صفحہ آخر -