کرونا کے بعد معاشی بحران، کراچی کی گارمنٹس فیکٹری سے سیکٹروں ملازمین برطرف

    کرونا کے بعد معاشی بحران، کراچی کی گارمنٹس فیکٹری سے سیکٹروں ملازمین ...

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)کرونا وائرس کے معاشی اثرات سامنے آنا شروع ہوگئے، کراچی سائٹ کی گارمنٹس فیکٹری نے 100 سے زائد ملازمین کو نوکری سے نکال دیا۔برطرف ملازمین نے کہاہے کہ وہ کئی سال سے فیکٹری میں کام کر رہے تھے، اچانک نکال دیا گیا ہے اب بچوں کو کہاں سے کھلائیں۔خیال رہے کہ حکومت سندھ نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے 23 مارچ سے سندھ بھر میں لاک ڈاؤن کررکھا ہے جو 14 اپریل تک جاری رہے گا۔اس دوران جائزہ لیا جائے گا کہ لاک ڈاؤن کو مزید سخت کرنا ہے یا اس میں نرمی کرنی ہے البتہ سندھ سمیت ملک بھر میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد اور ہلاکتوں میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔حکومت سندھ یہ اعلان بھی کرچکی ہے کہ جب تک کرونا وائرس پر قابو نہیں پالیا جاتا اور لاک ڈاؤن کی صورتحال رہتی ہے کوئی بھی ادارہ ملازمین کی تنخواہیں نہیں کاٹے گا اور نہ ہی ملازمین کو نوکری سے نکالے گا۔گزشتہ روز بھی وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران جن افراد کو نوکریوں سے نکالا جارہا ہے ان کی شکایات کے ازالے کیلئے شکایتی سیل بنادیا ہے۔حکومت سندھ نے مزدوروں کی ملازمت اور تنخواہوں کے تحفظ کا حکم نامہ بھی جاری کررکھا ہے جس کے تحت کوئی صنعتی ادارہ لاک ڈاؤن کے دوران نہ کسی مزدور کو نکال سکے گا اور نہ ہی اس کی تنخواہ کاٹی جائے گی۔

ملازمین برطرف

مزید :

صفحہ آخر -