رحیم یار خان، کرونا مریضوں کی تعداد بڑھ گئی، دانش سکول میں نیا قرنطینہ قائم

  رحیم یار خان، کرونا مریضوں کی تعداد بڑھ گئی، دانش سکول میں نیا قرنطینہ قائم

  

رحیم یارخان(بیورورپورٹ)ضلع بھر میں کورونا پھیلاؤ اور مریضوں کی تعداد بڑھنے کے پیش نظر دانش سکول میں 500 بیڈز پر مشتمل قرنطینہ قائم کر دیا گیا جبکہ اسلامیہ یونیورسٹی کیمپس اور شیخ زید ہسپتال سمیت ضلع بھر کے تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتالوں و سرکاری عمارتوں میں 400 بیڈز پر مستمل قرنطینہ سینٹرز اور آئسولیش وارڈز پہلے ہیں قائم ہیں جن میں ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدائت پر ضلعی انتظامیہ کی طرف سے زیر علاج (بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

مریضوں کو علاج و معالجہ کی بہترین سہولیات سمیت تین وقت کا کھانا چائے پانی اور ضروریات زندگی اور استعمال کی اشیاء فراہم کی جا رہی ہیں رحیم یار خان کے نواحی علاقوں میں واقع دانش سکول اسلامیہ یونیورسٹی کیمپس میں گرلز اور بوائز ہاسٹلز کے کمروں اور ہالز سمیت خواجہ فرید آئی ٹی یونیورسٹی، شیخ زید ہسپتال رحیم یار خان، تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال خان پور، صادق آباد، لیاقت پور اور دیگر جگہوں پر ہنگامی بنیادوں پر ائسو لیشن روم اور مریضوں کیلئے تمام سہولیات پہنچاتے ہوئے ڈاکٹرز نرسنگ و پیرامیڈیکل سٹاف کی ڈیوٹیاں لگائی گئی ہیں ہر مریض کیلئے نئے بستر سمیت علیحدہ ضروریات کی اشیاء جن میں تولیہ، صابن، ہینڈ واش، سرسوں کا تیل، کنگھی، ٹوتھ برش و پیسٹ، ہوائی چپل، شیونگ کریم و ریزر، ٹشو رول، بچوں کیلئے ہر سائز کے پیمپرز، دودھ کے پیکٹس، بسکٹ، اور خواتین کی اشیاء بھی شامل ہیں صبح ناشتہ دوپہر اور رات کے کھانے کیلئے مستند ہوٹل مالکان کی طرف سے حفظانِ صحت کے اصولوں کے عین مطابق کھانا بھی فراہم کیا جا رہا کھانا ڈسپوزل برتنوں اور پلاسٹ دستر خوان میں دیا جا رہا ہے استعمال شدہ برتنوں اور اور دوبارہ استعمال نہ ہونے والی اشیاء کو جلایا اور زمین میں دبایا جا رہا ہے مریضوں کے زیر استعمال اشیاء کو روزانہ کی بنیاد پر جلا کر گڑھے میں دبا دیا جائے گزشتہ روز ڈپٹی کمشنر علی شہزاد، ڈی پی او منتظر مہدی، ضلعی فوکل پرسن اے ڈی سی جی شیخ طاہر، اسسٹنٹ کمشنرز ریاست علی، اعتزاز انجم نے ایک بار پھر مریضوں کو ملنے والی علاج و معالجہ کی سہولیات کا جائزہ لیا۔

قرنطینہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -