تحقیقاتی کمیشن کو دھمکیوں پر وزیراعظم کااظہار برہمی، آئندہ ایسا ہوا تو سخت کارروائی ہوگی: عمران خان

    تحقیقاتی کمیشن کو دھمکیوں پر وزیراعظم کااظہار برہمی، آئندہ ایسا ہوا تو ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،،آئی این پی)وفاقی کابینہ نے کچھی کینال منصوبے کی تحقیقات ایف آئی اے سے لیکر نیب کو دینے، کمیٹی برائے توانائی کے فیصلوں کی توثیق،یونیورسل سروس فنڈ میں مزید اضلاع شامل کرنے،متروکہ وقف املاک بورڈ کی تنظیم نو کیلئے تجاویز اورمتروکہ وقف املاک بورڈ کی عمارتوں کوفلاحی کاموں کیلئے استعمال کرنے کی منظوری دیدی۔کابینہ اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ 25 اپریل کو کمیشن کی رپورٹ سامنے آنے پر مزید ایکشن ہو گا جو بھی ملوث ہوا قانون کے تحت کارروائی ہوگی،میری ہدایت پر انکوائری کمیٹی کی رپورٹس جاری کی گئیں، عوام سے رپورٹس پبلک کرنے کا وعدہ پورا کردیا۔ منگل کو وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا، جس میں 9نکاتی ایجنڈے پرغور کیا گیا اور موجودہ سیاسی صورت حال اور ملکی معاملات پر گفتگو کی گئی، کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ بھی دی گئی،کابینہ میں چینی اور آٹا بحران کی انکوائری رپورٹ پر بھی گفتگو ہوئی اور وزیراعظم نے حالیہ اقدامات پر کابینہ اراکین کو اعتماد میں لیا۔وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ میری ہدایت پر انکوائری کمیٹی کی رپورٹس جاری کی گئیں، عوام سے رپورٹس پبلک کرنے کا وعدہ پورا کردیا، 25 اپریل کو کمیشن کی رپورٹ سامنے آنے پر مزید ایکشن ہو گا، کمیشن کی رپورٹ کے بعد جو بھی ملوث ہوا قانون کے تحت کارروائی ہوگی۔ کابینہ میں ردوبدل پروزیراعظم کے اقدامات کوسراہاگیا،،وزیراعظم نے کہا کہ گڈگورننس،شفافیت یقینی بناناتحریک انصاف کے منشورکاحصہ ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے چینی بحران کی تحقیقات کرنے والے کمیشن کے ارکان کو دھمکیاں دیے جانے پر سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ چینی بحران کی تحقیقات کرنے والے کمیشن کے ارکان کو دھمکیاں دی گئی ہیں جس پر وزیراعظم نے سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔معاون خصوصی کے مطابق وزیراعظم نے متعلقہ عناصر کو خبردار کیا ہے کہ اگریہ عمل دہرایا گیا تو سخت اقدام کیا جائیگا۔ وزیراعظم نے واضح کیا کہ انصاف کی راہ میں کسی کو حائل نہیں ہونے دیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ سندھ حکومت نے بھی 2014 اور 2018 میں اومنی گروپ کی شوگر ملز کو سبسڈی دی، وزیراعظم 25 اپریل کو کمیشن کی حتمی رپورٹ کی روشنی میں مزید ایکشن لیں گے۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ 2017میں شوگر ملز مالکان نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان سے بھی سبسڈی منظور کرائی۔ وفاقی کابینہ کے اجلاس کے حوالے سے معاون خصوصی نے بتایا کہ اجلاس میں معاون خصوصی برائے احتساب و داخلہ شہزاد اکبر نے چینی بحران کی رپورٹ کابینہ اجلاس میں پیش کی۔فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ شوگر ملز نے اضافی ذخائر کی وجہ سے گنا خریدنے سے انکار کیا، وزیراعظم نے رپورٹ کی روشنی میں کاشت کاروں کے مسائل کیحل کی ہدایت کی ہے۔انہوں نے کہا کہ وفاق کی طرف سے چینی کی برآمد پر سبسڈی نہیں دی گئی، شوگرملزکے نمائندہ وفد نے 2017میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان سے ملاقات کی تھی اور شوگر ملوں کے لیے 20ارب روپے کی سبسڈی منظور کرائی تھی۔ 2014سے 2016کے درمیان بھی شوگر ملز کو سبسڈی دی گئی۔انہوں نیکہا کہ موجودہ حکومت نے 2014کے بعد پہلی بار گنے کی قیمت میں اضافہ کیا جس کا مقصد کاشت کاروں کو فائدہ دینا تھا۔معاون خصوصی نے بتایا کہ 25 اپریل کو انکوائری کمیشن کی حتمی رپورٹ پر وزیراعظم قانون کے مطابق ایکشن لیں گے، وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف ا?ئی اے) کی تحقیقاتی رپورٹ میں شوگر پالیسی پر کئی سوالات اٹھائے گئے ہیں، مستقبل میں مصنوعی بحران سے بچنے کیلئے اصلاحات لائی جائیں گی۔انہوں نے بتایا کہ وفاقی کابینہ نے کمیٹی برائے توانائی کے اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کی، متروکہ وقف املاک بورڈ کی تنظیم نو کیلئے ٹاسک فورس کی تجاویز کی منظوری دی گئی اور متروکہ وقف املاک بورڈ کی عمارتوں کوفلاحی کاموں کیلئے استعمال کرنے کی منظوری دی گئی۔فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ احساس پروگرام میں کسی قسم کا امتیازی سلوک نہیں برتا جا رہا، معاون خصوصی صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کورونا کی تازہ ترین صورتحال سے کابینہ کو آگاہ کیا، و۔فردوس عاشق اعوان کے مطابق کابینہ اجلاس میں معاون خصوصی عثمان ڈار نے ٹائیگر فورس کے حوالے سے بریفنگ دی، 7لاکھ 17ہزار 119رضا کار ٹائیگر فورس میں رجسٹرڈ ہوچکے ہیں، ٹائیگر فورس ضلع، تحصیل اور یونین کونسل کی سطح پر کام کرے گی۔فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام کو کورونا سے محفوظ رکھنا اور ان کیلئے ریلیف کی فراہمی وزیراعظم کی پہلی ترجیح ہے۔معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کابینہ اجلاس میں حکومت کے ریلیف اقدامات کی نچلی سطح پر منتقلی کے عمل کا جائزہ لیا جائے گا، عوام کی سہولیات کی راہ میں حائل کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائیگی، صوبوں کے ساتھ تعاون و ہم آہنگی کے ساتھ آگے بڑھتے ہوئے مستحق افراد کے گھر گھر پہنچیں گے۔فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا صنعت کا مرحلہ وار پہیہ چلانے کیلئے نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی کی سفارشات بھی کابینہ کے سامنے رکھی جائیں گی، ریلیف کاوشوں کیلئے ٹائیگر فورس اور مخیر حضرات کے موثر کردار پر لائحہ عمل ترتیب دیا جائے گا۔

وفاقی کابینہ

مزید :

صفحہ اول -