لاک ڈاؤن مزید بڑھا تو صورتحال مزید سنگین ہوجائے گی، محمد حسین محنتی

لاک ڈاؤن مزید بڑھا تو صورتحال مزید سنگین ہوجائے گی، محمد حسین محنتی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی سندھ کے امیر وسابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے بچاؤ کیلئے حکومتی انتظامات ناکافی اور اعلانیہ ریلیف فنڈ بھی کہیں نظر نہیں آرہا ہے۔،جماعت اسلامی کی فلاحی تنظیم الخدمت نے اس وقت تک سندھ سمیت پورے پاکستان میں 45 کروڑ روپے کا راشن ودیگر سامان لاک ڈاؤن سے متاثرہ افراد میں تقسیم کرچکی ہے،ماسک کی فراہمی میں بھی کرپشن کی خبریں تشویش ناک بات ہے۔امدادی راشن کی تقسیم کو منصفانہ بنانے کے لیے اچھی ساکھ کے حامل معززین کو شامل کیا جائے، کورونا کے کے خلاف فرنٹ لائن پر لڑنے والے ڈاکٹرز سمیت کام کرنے والا پیرا میڈیکل اسٹاف ہمارے ہیروز ہیں حکومت نے ان کو بھی ضروری حفاظتی سامان سے محروم رکھا ہے،جس سے حکومتی سنجیدگی کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے، لاک ڈاؤن مزید بڑھا تو معیشت اور بھوک و افلاس کی صورتحال مزید سنگین ہوجائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نواب شاہ میں الخدمت ہیلپ سینٹر کا دورہ، رضا کاروں کے اجلاس سے خطاب،پیپلز میڈیکل ہاسپیٹل کی ایم ایس ڈاکٹر سعیدہ بلوچ اور ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے ڈاکٹر محسن مینگل کو حفاظتی گاؤن پیش کرنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کے دوران کیا۔ امیر ضلع سرور قریشی، قیم سردار آرائیں، الخدمت کے ضلعی صدر عبدالوہاب، امیر شہر فیصل ہمایوں اور صوبائی سیکرٹری اطلاعات مجاہد چنا بھی ساتھ موجود تھے۔انہوں نے مزید کہاکہ کورنا وائرس ہمارے گناہوں کا نتیجہ اور اللہ کی طرف سے آزمائش ہے۔قدرتی آفت سے لڑنا نہیں بلکہ بچنا ہے۔ گناہوں سے توبہ استغفار اور رجوع الی اللہ کے ذریعے سے ہی اس وبا سے نجات حاصل کی جا سکتی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں محمد حسین محنتی نے کہاکہ حکومت نے الخدمت کو امدادی سرگرمیوں میں شامل کیا تو امانت دیانت اور خدمت کے جذبہ کے ساتھ عوام کی خدمت کریں گے کیوں کہ ہمارے پاس ویڑن تجربہ اور تربیت یافتہ رضاکاروں کی پوری ٹیم موجود ہے۔دریں اثناء انہوں نے سکرنڈ میں الخدمت ہیلپ سینٹر کا دور، الخدمت کچن کے تحت لاک ڈاؤن سے متاثر مستحق خاندانوں تک پکا پکا کھانا تقسیم، سکرنڈ سول ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر آصف رضا بروہی کو حفاظتی گاون پیش اور پریس کانفرنس سے بھی خطاب کیا جبکہ الخدمت کے ذمہ دار کنور راشد مکرم نے صوبائی امیر کو ریلیف سرگرمیوں کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔۔

مزید :

صفحہ اول -