کورونا وائرس کیخلاف آئرلینڈ کے وزیراعظم اور برطانیہ کی ملکہ حسن کاایسا اقدام کہ پاکستانی صدر اور فردوس عاشق اعوان بھی سوچ میں پڑجائیں

کورونا وائرس کیخلاف آئرلینڈ کے وزیراعظم اور برطانیہ کی ملکہ حسن کاایسا ...
کورونا وائرس کیخلاف آئرلینڈ کے وزیراعظم اور برطانیہ کی ملکہ حسن کاایسا اقدام کہ پاکستانی صدر اور فردوس عاشق اعوان بھی سوچ میں پڑجائیں

  

کورونا وائرس سے جنگ لڑنے کیلئے آئرلینڈ کے وزیراعظم اور مس انگلینڈ بھی میدان میں آگئے۔ انہوں نے بطور ڈاکٹر کام  کرنا شروع کردیا ہے. ان کے اس اقدام کو  دنیا بھر میں سراہا جارہا ہے۔پاکستان میں ڈاکٹر عارف علوی، ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان اور دوسرے سیاستدان بھی جنہوں نے طبی محکموں میں ڈگریاں لی ہیں وہ اور سول سروس میں آئے ڈاکٹر بھی ا س بارے میں  سوچ سکتے ہیں۔

آئرلینڈ کے وزیر اعظم 41 سالہ لوئے ورادکر نے کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلاؤ اور ڈاکٹرز کی قلت کے باعث بطور ڈاکٹر ذمہ داریاں ادا کرنا شروع کردی ہیں۔ وہ 2013 میں ڈاکٹری چھوڑ کر سیاست میں آئے تھے۔وزیر اعظم کی اہلیہ، بہن اور والدین بھی ڈاکٹر ہیں اور خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔

آئرلینڈ حکومت کی اپیل پر 5 ہزار ریٹائرڈ ڈاکٹرز نے بھی کورونا ڈیوٹی کیلئے خود کو دوبارہ رجسٹرڈ کروالیا ہے.

آئرلینڈ، فرانس، ہنگری، انگلینڈ اور یورپ کے دوسرے متعدد ممالک میں سیاست دانوں اور کھیل، شوبز، سیاست اور دوسرے اہم شعبوں سے تعلق رکھنے والی اہم و معروف شخصیات نے بھی دوبارہ بطور ڈاکٹر خدمات سر انجام دینا شروع کردی ہیں۔مس انگلینڈ 2019 کا اعزاز حاصل کرنے والی 24 سالہ بھاشا مکھرجی نے مقابلہ حسن میں حصہ لینے کے لیے ڈاکٹری چھوڑدی تھی مگر اب انہوں نے بطور ڈاکٹر خدمات سر انجام دینے کے لیے خود کو دوبارہ رجسٹرڈ کرالیا ہے.

مزید :

کورونا وائرس -