کورونا وائرس ،چین نے اپنے ہمسایہ ملکوں کو بڑی پیشکش کر دی

کورونا وائرس ،چین نے اپنے ہمسایہ ملکوں کو بڑی پیشکش کر دی
کورونا وائرس ،چین نے اپنے ہمسایہ ملکوں کو بڑی پیشکش کر دی

  

بیجنگ(ڈیلی پاکستان آن لائن)چینی وزیر خارجہ وانگ یءاور بنگلہ دیشی ہم منصب  اے کے عبدالمومن کےدرمیان ٹیلی فونک رابطہ،دونوں ملکوں کے مابین کرونا وائرس عالمی وباء کے موقع پر تعاون جاری رکھنے سے متعلق امور پر تبادلہ خیال،چینی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ چین ہمسایہ ملکوں کے ساتھ مل کر کورونا  وائرس کے خلاف لڑنے کے لئے تیار ہے ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق 

چینی وزیر خارجہ نے اپنے بنگلہ دیشی ہم منصب کے ساتھ ٹیلی فون پر  دونوں ملکوں کے مابین کرونا وائرس عالمی وباء کے موقع پر تعاون جاری رکھنے سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا۔وانگ نے کہا کہ چین اور بنگلہ دیش دوست ہمسایہ ہیں جنہوں نے ہمیشہ ایک دوسرے کو سمجھا ہے اور آپس میں تعاون کیا ہے جبکہ بنگلہ دیش کی حکومت نے نوول کرونا وائرس کے خلاف جنگ کے ایک مشکل وقت میں چین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے چین کے ساتھ تعاون کیا ہے۔وانگ کا کہنا تھا کہ اس وقت وائرس نے دنیا کے بہت سارے علاقوں کو متاثر کیا ہے اور بنگلہ دیش میں بہت سارے کیسز کی تصدیق ہوئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ چین جو جنوبی ایشیا میں نوول کرونا وائرس پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے ۔انھوں نے بنگلہ دیش کو مشورہ دیا ہے کہ وائرس کے تدارک اور اس پر قابو پانے کے ابتدائی اقدامات اٹھائے تاکہ وائرس کے پھیلا ﺅ کو موثر طریقے سے روک سکے۔

وانگ نے کہا کہ چین انسانیت کو ایک مشترکہ مستقبل کی حامل ایک برادری سمجھتا ہے اور بنگلہ دیش کو بروقت طبی سپلائی فراہم کرکے اس ملک کی مدد کے لئے کاروباری اداروں کو متحرک کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ چین بنگلہ دیش میں وائرس کی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے مزید مدد فراہم کرنے کے لئے تیار ہے اور اس کےساتھ متعلقہ معلومات اور تجربات بغیر کسی تحفظات کے شیئر کرکے وائرس کے خلاف جنگ میں مدد کے لئے ماہرین بھیجے گا۔وانگ کا کہنا تھا کہ ایک ذمہ دار ملک کی حیثیت سے چین بنگلہ دیشن کے ساتھ مضبوطی سے کھڑا ہے اور دیگر ہمسایہ ملکوں کے ساتھ وائرس کے خلاف مل کر لڑنے کے لئے تیار ہے تاکہ عالمی معیشت پر وائرس کے اثرات سے نمٹنے کے ساتھ ساتھ اپنی بھر پور کوشش کرتے ہوئے معمول کے بین الاقوامی صنعتی تعاون کو برقرار رکھنے اور خطے اور دنیا بھر کے لوگوں کے تحفظ اور فلاح و بہبود کےلئے اپنی بھر پور کوششیں جاری رکھے گا۔

اس موقع پر بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ اے کے عبدالمومن نے وائرس کے خلاف چین کی شاندار کامیابیوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ بنگلہ دیش سمجھتا ہے کہ چین نے وائرس کے خلاف جنگ میں دنیا بھر کے دوسرے ملکوں کے لئے ایک مثال قائم کی ہے۔بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ نے کہا کہ نوول کرونا وائرس کے خلاف جنگ میں بروقت مدد کی فراہمی پر بنگلہ دیش چین کا شکر گزار ہے اور امید رکھتا ہے کہ چین فیس ماسکس اور وینٹی لیٹرز سمیت امداد کی فراہمی جاری رکھے گا۔اے کے عبدالمومن نے مزید کہا ہے کہ مشکل وقت میں چین کے قیمتی تعاون نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ چین اور بنگلہ دیشن انتہائی قابل بھروسہ دوست اور شراکت دار ہیں۔ ٹیلی فون پر گفتگو کے دوران دونوں وزرائے خارجہ نے میانمار کی راکھائیں ریاست کےحوالے سے معاملات پر بھی تبادلہ خیال کیا اور بنگلہ دیش نے اس امید کا اظہار کیا کہ مہاجرین کی جلد از جلد واپسی شروع ہو جائےگی جبکہ چین نے اس معاملے پر ثالثی جاری رکھنے پر آمادگی کا اظہار کیا۔cin 

مزید :

کورونا وائرس -