کورونا وائرس، پاکستان میں مریضوں کی کتنے فیصد تعداد خواتین اور کتنے فیصد حضرات پر مشتمل ہے؟

کورونا وائرس، پاکستان میں مریضوں کی کتنے فیصد تعداد خواتین اور کتنے فیصد ...
کورونا وائرس، پاکستان میں مریضوں کی کتنے فیصد تعداد خواتین اور کتنے فیصد حضرات پر مشتمل ہے؟

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں اب تک کورونا وائرس کے 4183 مریض سامنے آچکے ہیں جن میں سب سے زیادہ تعداد مردوں کی ہے۔

سینئر صحافی عمر قریشی کے مطابق پاکستان میں کورونا وائرس کے مریضوں  کی زیادہ تعداد مردوں پر مشتمل ہے۔ پاکستان میں کُل مریضوں کا 71 اعشاریہ 9 فیصد حصہ حضرات پر مشتمل ہے جبکہ 28 اعشاریہ ایک فیصد خواتین اس مرض کا شکار ہوئی ہیں۔

کالم نویس سکندر علی نے عمر قریشی کی ٹویٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ سائنسی طور پر ثابت ہوچکا ہے کہ خواتین کا نظام مدافعت مردوں کی نسبت زیادہ مضبوط ہوتا ہے اور وہ اس طرح کی بیماریوں کا کم نشانہ بنتی ہیں۔

علی میر نے کہا کہ کورونا وائرس کا شکار ہونے والے مردوں میں زیادہ تعداد 20 سے 29 سال کے لڑکوں کی ہے جن کو گھر بیٹھتے موت آتی ہے۔

ایک صارف نے کہا کہ یہ صرف پاکستان ہی نہیں بلکہ دنیا بھر میں ایک جیسا ہی معاملہ ہے کہ خواتین کی کورونا وائرس کے خلاف مزاحمت زیادہ ہے۔ خواتین کا گھروں سے باہر نکلنے کا فارمولہ پاکستان میں تو اپلائی ہوسکتا ہے لیکن امریکہ اور یورپ کی عورت بھی مرد کے جتنا ہی گھر سے باہر نکلتی ہے۔

مزید :

قومی -کورونا وائرس -