شالیمار کے علاقہ میں سسرالیوں نے 35سالہ حاملہ خاتون کو قتل کر ڈالا

شالیمار کے علاقہ میں سسرالیوں نے 35سالہ حاملہ خاتون کو قتل کر ڈالا

  

 لاہور (کر ائم رپو رٹر)تھانہ شالیمار کی حدود میں حوا کی ایک اور بیٹی کا سسرالیوں کے ہاتھ قتل 35 سالہ شبیا نامی خاتون جو حاملہ تھی اس کو موت کے گھاٹ اتار دیا  تفصیلات کے مطابق شالیمار کا علاقہ کالج پارک میں  35 سالہ خاتون دو بچوں کی ماں جو اب بھی حاملہ تھی اس کو شوہر آصف، نند آسیہ، دیور آصف اور اسکی بیوی مدیحہ نے مل کر گلا دبا کر موت کے گھاٹ اتار دیا مقتول شیبا کے والد مظفر حسین نے  بتایا ہے کہ میں نے اپنی بیٹی کی6 سال پہلے آصف نامی شخص سے شادی کی تھی میری بیٹی پر اس کا شوہر،نند،دیور اور اسکی بیوی ظلم کرتے رہتے تھے جو کہ میری بیٹی نے کئی بار اپنے بھائی ابوبکر اور فیملی ممبران سیذکر کیا تھا لیکن شیبا کو سمجھاتے تھے لڑائی جھگڑا چلتا رہتا ہے مزید انکا کہنا تھا گزشتہ روز اچانک میرے بیٹے کو کال آئی کہ شیبا کا انتقال ہوگیا ہے جس پرمیں نے اپنے داماد آصف کو کال کی تو اس نے بتایا گورنمنٹ کوٹ خواجہ سعید ہسپتال لے گئے   ہم وہاں پہنچے ہمیں بتایا گیا ہاٹ اٹیک سے موت واقع ہوئی پر ہمیں شک ہوا پوسٹ مارٹم کروایا رپورٹ آنے پر ثابت ہوا شیبا کو ہاٹ اٹیک نہیں ہوا بلکہ گلہ دبا کر مارا گیا اس پر تھانہ شالیمار کے ایس ایچ او عاصم حمید کا کہنا تھا مقدمہ درج کر لیا گیا ملزمان کی تلاش جاری ہے مظفر حسین نے مطالبہ کر رکھا ہے کہ سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگراور ڈی آئی جی ساجد کیانی سے درخواست ہے واقع کا نوٹس لیکر انصاف فراہم کیا جائے۔

مزید :

علاقائی -