ماسٹر کارڈ اور اوبرکاشراکت داری کو توسیع دینے کا فیصلہ

ماسٹر کارڈ اور اوبرکاشراکت داری کو توسیع دینے کا فیصلہ

  

لاہور(پ ر) ماسٹر کارڈ کی اوبر کے ساتھ طویل مدتی شراکت داری نئے اسٹریٹجک اقدام کے ساتھ مسلسل بڑھ رہی ہے جس میں ڈیجیٹل پیمنٹ اور جدید مالی شمولیت پر توجہ مرکوز کی گئی ہے،جس سے ماسٹر کارڈ کو پورے مشرق وسطیٰ اور افریقہ میں سہولت حاصل ہوگی۔خطہ میں پہلی بار ماسٹر کارڈ کے ساتھ اس شراکت داری سے اوبر اپنے کاوباری آپریشنز کو ڈیجیٹائزکرسکے گا اور اوبر رائیڈز، اوبر ایٹس، اوبر پاس، اور اوبر فار بزنس کیلئے ہر قسم کی ادائیگیوں کیلئے ماسٹر کارڈ کے انفرا اسٹریکچر سے استفادہ کرسکے گا۔ اس شراکت داری سے کیش لیس ادائیگیوں میں اضافہ، ڈیجیٹل ادائیگیوں کی قبولیت اور لائلٹی ریوارڈز کے ساتھ اوبر کے سماجی اثرات کے تعاون میں معاونت ملے گی۔ماسٹر کارڈ کی جانب سے اکانومی رپورٹ2021میں مشاہدہ کیا گیا ہے کہ کوویڈ19کی صورتحال نے ڈیجیٹل صارفین کی خرچ کرنے کی عادات میں مستقل تبدیلیاں متعارف کرائیں،آن لائن بینکنگ میں اضافہ ہوا،اور مالی شمولیت کے مواقع پہلے سے کہیں زیادہ تیزی سے بڑھے۔ماسٹر کارڈ مشرق وسطیٰ و افریقہ کی ایگزیکٹیو وائس پریذیڈنٹ مارکیٹ ڈیولپمنٹ آمنہ اجمل نے اس حوالے سے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اس شراکت داری کے ذریعے دونوں کمپنیاں اپنی وسیع کوششوں کے ذریعے مالی شمولیت کے خلاء کو ختم کرسکتی ہیں۔

ماسٹر کارڈ مزید کنیکٹڈ دنیا کی تعمیر کیلئے ڈیجیٹل پلیئرز کے ساتھ شراکت جاری رکھے گا،رقم کی محفوظ اور فوری منتقلی انفرادی شخص،ورکر اور کسٹمرکیلئے انتہائی اہم ہے جبکہ ہم معاشی بحالی کی کوششوں کی حمایت کرتے ہیں۔ہماری اس بڑھتی ہوئی شراکت داری کے ذریعے بہتر آپریشنل افادیت کے نتیجے میں کمپنی کی طویل مدتی ترقی بھی ممکن ہوسکے گی۔ریجنل جنرل منیجر مشرق وسطیٰ و افریقہ Tino Wakedنے کہا کہ یہ پورے مشرق وسطیٰ و افریقہ میں سب سے بڑی شراکت داری ہے اور ہم مشرق وسطیٰ و افریقہ میں اپنے پارٹنر کے ساتھ اہم مالیاتی حل متعارف کرانے پر انتہائی فخر محسوس کرتے ہیں۔یہ نئی شراکت داری دونوں اداروں کے مابین کام پر استوار ہے،گزشتہ برس مشترکہ اقدام کے تحت ماسٹر کارڈ نے مشرق وسطیٰ و افریقہ میں کمیونٹیز کی سپورٹ کیلئے اوبر کے ذریعے 1لاکھ20ہزار مفت ٹرپ اور غذا فراہم کی۔ماسٹر کارڈ اور اوبر کے درمیان اس اسٹریٹجک شراکت داری کے ذریعے نمایاں پارٹنرز کی مدد سے شہروں،اسپتالوں اور فرنٹ لائن ورکرز اور پسماندہ افراد کو مفت رائیڈز اور کھانا فراہم کیا گیا۔دونوں ادارے اب بھی کوویڈ19کی موجودہ صورتحا ل میں لاجسٹک اور فر رائیڈ کی سہولیات کی فراہمی کیلئے پرعزم ہیں۔ماسٹر کارڈ کا عزم ہے کہ سال2025تک ایک ارب افراد کو مالی شمولیت میں لایا جاسکے،5کروڑ مائیکرو اور اسمال بزنس اور ڈھائی کروڑ کاروباری خواتین کو ڈیجیٹل اکانومی میں لایا جاسکے اوراس ضمن میں اوبر کے ساتھ کئے گئے کام کلیدی کردار ادا کرینگے.

مزید :

کامرس -