پنجاب بھر میں ویکسی نیشن سنٹرز کا دائر کاربڑھانے کا فیصلہ، ہسپتالوں میں آکسیجن کی کمی نہیں آنے دیں گے: عثمان بزدار

  پنجاب بھر میں ویکسی نیشن سنٹرز کا دائر کاربڑھانے کا فیصلہ، ہسپتالوں میں ...

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی)پنجاب میں عوام کیلئے ویکسینیشن کے حوالے سے وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے اہم اعلان کر دیا۔ صوبہ بھر میں کورونا مثبت کیسز کے حوالے سے ویکسینیشن سینٹرز کا دائرہ کار بتدریج بڑھانے کا اصولی فیصلہ کر لیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ عوام کی ویکسینیشن یقینی بنانے کیلئے مزید کورونا ویکسین ڈوز کی خریداری کیلئے ڈیڑھ ارب روپے مختص کر رہے ہیں۔ پنجاب کے عوام کیلئے  10لاکھ سے زائد انسداد کورونا ڈوزز خریدی جائیں گی۔ پنجاب کے ہر شہری کو کورونا سے بچانے کے لئے تمام ممکنہ اقدامات کر رہے ہیں اور مزید بھی کریں گے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے بتایا کہ پنجاب میں کورونا ویکسینیشن کیلئے بتدریج مزید سینٹر زبھی قائم ہوں گے۔ پی کے ایل آئی میں ویکسینیشن سنٹر فعال، لاہور میں ویکسینیشن مراکز 3 ہو جائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب میں 50 سال سے زائدالعمر افراد کی رجسٹریشن شروع ہو چکی ہے اور شہری 1166 پر شناختی کار ڈ کا نمبر بھیج کر رجسٹریشن کرا رہے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے مزید بتایا کہ ہسپتالوں میں کورونا مریضوں کیلئے آکسیجن کی دستیابی یقینی بنانے کیلئے وفاق سے رابطہ ہے، کہیں بھی آکسیجن کی کمی نہیں آنے دیں گے۔ پنجاب کے زیادہ مثبت کیسز والے اضلاع میں تمام تر ضروری سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا سے مکمل نجات حاصل کرنے کے لئے عوام کا بھرپور تعاون بے حد ضروری ہے اور محض ماسک کے استعمال سے کورونا وائرس سے بچاؤ ممکن ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیرصدارت اجلاس میں کورونا کی صورتحال،ویکسینیشن کے عمل اور دیگر امور پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان اورمتعلقہ حکام نے شرکت کی۔

عثمان بزدار

لاہور(نمائندہ خصوصی)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے اسلام آباد میں پلاننگ کمیشن کے اجلاس میں شرکت کی۔ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن جہانزیب خان،سیکرٹری پلاننگ کمیشن حامد یعقوب شیخ،ایڈیشنل سیکرٹری اورممبر پلاننگ کمیٹی بھی اجلاس میں شریک ہوئے۔اجلاس میں رواں مالی سال کے فیڈرل پی ایس ڈی پی بجٹ سے پنجاب میں میگا پراجیکٹس کا جائزہ لیاگیا۔فیڈرل پی ایس ڈی پی سے پنجاب کے ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل پر پیشرفت پرغورکیاگیا اوران کی مقررمدت میں تکمیل پر زور دیا گیا۔شرکاء کو لائیوسٹاک،پرائمری ہیلتھ، ایجوکیشن،انڈسٹری اورفوڈ سکیورٹی ایشوز پر بریفنگ دی گئی۔پلاننگ کمیشن نے چھوٹے ڈیموں کی تعمیر کے منصوبوں کی بروقت تکمیل کی ضرورت پر زور دیا۔اجلاس میں محکمہ آبپاشی کے ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا۔پنجاب میں سڑکوں کی تعمیر نو،توسیع اوردورویہ شاہراہوں کی تعمیر کے منصوبوں کابھی جائزہ لیاگیا۔اجلاس میں وفاق اور پنجاب کے درمیان ترقیاتی منصوبوں پراشتراک کار اورروابط بہتر بنانے کی ضرورت پر زور دیاگیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے پلاننگ کمیشن کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سب سے بڑا صوبہ ہونے کے باوجود پنجاب کو ترقیاتی بجٹ میں شیئرکم دیا جارہا ہے۔وفاق سے پی ایس ڈی پی بجٹ میں جائز شیئر دینے کی توقع کرتے ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ عوام کی ضروریات اورمسائل کو مدنظر رکھ کر ترقیاتی منصوبے تیار کیے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں میں شفافیت اورمدت تکمیل کی پابندی کو مدنظر رکھا جائے۔پنجاب کے ہر ضلع میں عوام کی فلاح وبہبود کیلئے ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ پیکیج جارہے ہیں۔ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن جہانزیب خان نے کہا کہ پنجاب میں فیڈرل حکومت کے ذریعے جاری ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل میں رکاوٹوں کو دورکیا جائے۔ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن نے کہا کہپی ایس ڈی پی بجٹ میں پنجاب کے عوام کی فلاح وبہبود کو مدنظر رکھتے ہوئے میگاپراجیکٹ دیئے جائیں۔پنجاب میں نکاسی آب کے منصوبوں کو بروقت مکمل کرنے میں تعاون کریں گے۔ چیف سیکرٹری پنجاب،چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات اوردیگر متعلقہ حکام بھی اجلاس میں موجود تھے۔

اجلاس

مزید :

صفحہ اول -