ہائیکورٹ، لڑکی کو والدہ کیساتھ جانیکی اجازت،شوہر کا شور شرابہ

ہائیکورٹ، لڑکی کو والدہ کیساتھ جانیکی اجازت،شوہر کا شور شرابہ

  

 ملتان (خصو صی  ر پو رٹر) لاہور ہائی کورٹ ملتان بنچ کے جج مسٹر جسٹس محمد وحید خان نے خاتون بازیاب شدہ بیٹی کو اسکے ساتھ جانے کی اجازت دے دی ہے لڑکی نے اپنی والدہ کے ساتھ جانے کا اظہار کیا تو اس کے شوہر ناصر محمود نے واویلا مچایا اور کہا کہ وہ اس کی منکوحہ ہے اس کی بیوی کو ساتھ بھیجا جائے عدالت نے قرار دیا کہ وہ لڑکی کے بیان کے مطابق فیصلہ کرنے کے(بقیہ نمبر37صفحہ6پر)

 پابند ہیں لڑکی عدالت سے باہر ہیں تو اس کے سسرال والوں نے زبردستی اغوا کرنے کی کوشش کی جس پر عدالت عالیہ کے برآمدے میں شور مچ گیا چنانچہ فاضل عدالت نے فوری طور پر سیکیورٹی اسٹاف کو طلب کیا اور ان پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے کہ یہ کیسی سیکورٹی ہے کہ دن دیہاڑے لڑکی کو عدالت کے دروازے سے اغوا کرنے کی کوشش کی جائے بعد ازاں انہوں نے لڑکی کے سسرال والوں کی بھی سرزنش کی اور کہا کہ وہ قانون اپنے ہاتھ میں لینے سے باز رہیں لڑکی کی ماں کی درخواست پر عدالت عالیہ نے اسے پولیس کی نگرانی میں گھر بھجوایا کیس میں اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل وسیم الدین ممتاز نے عدالت کی معاونت کی۔

طلب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -