ملتان ڈویژن: 40دیہی مال مراکز فعال کرنیکا فیصلہ، اقدامات شروع 

ملتان ڈویژن: 40دیہی مال مراکز فعال کرنیکا فیصلہ، اقدامات شروع 

  

 ملتان(سپیشل رپورٹر) وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے عوام کو ریونیو سروسز ان کی دہلیز پر فراہم کرنے کے انقلابی منصوبہ کی ہدایات جاری کر دیں۔ حکومت پنجاب نے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کی طرف ایک اور قدم بڑھاتے ہوئے دیہی مال مراکز فعالی کا آغاز کردیا۔ اس سلسلے میں اجلاس کمشنر آفس میں منعقد ہوا جس کی صدارت کرتے ہوئے کمشنر ملتان ڈویژن جاوید اختر محمود نے کہا کہ ڈویژن میں ابتدائی فیز میں 40 دیہی (بقیہ نمبر53صفحہ6پر)

مراکز مال مراکز فعال کئے جائیں۔دیہی مراکز مال میں فرد ملکیت کا اجراء، بائیومیٹرک، ریونیو انتقلات سمیت تمام سہولیات فراہم ہونگی۔گردواری کے نظام کو ڈیجیٹل کیا جائے گا اور دیہی مراکز مال میں کمپیوٹر سسٹم اور انٹرنیٹ سسٹم بھی نصب کیا جائے گا۔انہوں نے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی کہ 10 اپریل تک دیہی مال مراکز فعال کریں۔جن قانونگوئی میں لینڈ ریکارڈ سنٹر قائم ہیں وہاں دیہی مراکز مال قائم نہیں ہوں گے۔کمشنر جاوید اختر محمود نے مزید کہا کہ صدیوں پرانا بوسیدہ ریونیو سسٹم ختم کرنے کیلئے اور محکمہ مال کو جدید خطوط پر استوار کرنے کیلئے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو نے نیا سسٹم متعارف کروایا ہے جس سے کرپش مافیا، سرخ فیتہ کلچر،غیر قانونی قبضہ مافیا کی حوصلہ شکنی ہو سکے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ ڈیجیٹل سہولیات کی فراہمی کا مقصد دیہی علاقوں کے باسیوں کو ریلیف دینا ہے۔ دیہی مراکز مال سے ریونیو ریکارڈ کی عدم دستیابی سمیت تمام شکایات کا ازالہ ہوگا۔شہری اپنی قانون گوئی میں ریونیو سہولیات سے مستفید ہوسکیں گے۔ دیہی مراکز مال کے قیام سے اراضی مراکز کے ورکنگ لوڈ میں کمی آئے گی۔اجلاس میں ڈی سی ملتان علی شہزاد، اسسٹنٹ کمشنر ریونیو مبشر الرحمن، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو طیب خان، ویڈیو لنک پر ڈی سی لودھراں عمران قریشی، ڈی سی خانیوال آغا ظہیر عباس شیرازی، ڈی سی وہاڑی مبین الٰہی اور دیگر ریونیو افسران موجود تھے۔

بائیو میٹرک

مزید :

ملتان صفحہ آخر -