قتل مقدمہ، مجرم کی سزا ئے موت عمر قید میں تبدیل کرنیکا حکم

  قتل مقدمہ، مجرم کی سزا ئے موت عمر قید میں تبدیل کرنیکا حکم

  

ملتان (خصو صی  ر پو رٹر) لاہور ہائی کورٹ ملتان کے ڈویژن بینچ نے جائیداد کی تقسیم کے تنازع پر سگے بھائی کو گولی مار کر قتل کرنے کے مقدمہ میں ملوث ملزم کی موت کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کرنے کا حکم دے دیا ہے۔قبل ازیں عدالت عالیہ میں ملزم علی اصغر نے کونسل پرنس ریحان افتخار شیخ کے ذریعے سزا کے خلاف اپیل دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ اس کے خلاف پولیس تھانہ ہڑپہ ضلع ساہیوال نے  یکم اگست 2014 کو مقدمہ نمبر 413 درج کیا جس میں (بقیہ نمبر46صفحہ7پر)

اس کی بھابھی روبینہ کوثر نے الزام عائد کیا کہ اسکا والد محمد بشیر جیٹھ صفدر علی اور مقتول شوہر علی اختر عید کے موقع پر باتیں کر رہے تھے کہ اس دوران بڑا جیٹھ ملزم علی اصغر اپنی بیگم بشیراں بی بی کے ہمراہ گھر میں گھس آیا اور جائیداد میں حصہ نہ دینے پر  ملزم نے 12 بور پستول سے فائر کیا جو مقتول علی اختر کے سینے اور کندھے پر لگا جو زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر جاں بحق ہوگیا اور اہل علاقہ اکٹھے ہو گئے جس پر ملزم کے خلاف سیشن کورٹ میں ٹرائل چلا اور اسے یکم جون 2016 کو عدالت نے سزائے موت موت اور دو لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنائی جس کے خلاف ملزم نے عدالت عالیہ سے رجوع کیا تو عدالت نے وکلا دلائل کے بعد ملزم کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کر دیا۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -