جمیعت طلباء اسلام کا تعلیمی اداروں کی بندش کیخلاف احتجاجی مظاہرہ 

جمیعت طلباء اسلام کا تعلیمی اداروں کی بندش کیخلاف احتجاجی مظاہرہ 

  

 پشاور(سٹی رپورٹر)تعلیمی اداروں کی بندش کیخلاف  ملک بھر کی طرح جمعیت طلباء اسلام ضلع پشاور نے بھی پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ تمام تعلیمی اداروں کو ایس او پیز کیساتھ کھولا جائے اور مزید طلبہ کا قیمتی وقت ضائع نہ کیا جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائر کار وسیع کرینگے مظاہرے کی قیادت شکیل خان اور دیگر نے کی جبکہ مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے  جس پر تعلیمی اداروں کی بندش کے خلاف نعرے درج تھے اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ کورونا کی آڑمیں تعلیمی ادارے  بندکرنانوجوان نسل کو تعلیم سیمحروم رکھنے کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ کوروناایس اوپی پر سیاسی جلسے جلوسوں میں کیوں عمل درآمدنہیں کیاجاتاہے جبکہ صرف تعلیمی اداروں میں ہی کورونا دکھائی دیتا ہے مظاہرین کا کہنا تھاکہ قبائلی علاقہ جات میں پہلے سے شرح خواندگی کی تشویشناک ہے جبکہ مزید تعلیمی اداروں کی بندش سے پسماندگی میں مزید اضافہ ہوگا کیونکہ قبائلی اور ا پسماندہ علاقوں کے طلباء ا نٹرینٹ کی سہولت سے محروم ہے،آن لائین تعلیمی نظام سے مستفید نہیں ہوسکتے تاہم سکولز، کالجز، مدارس اور مساجدمیں کوروناایس پی پر عمل درآمد کے حق میں ہے  جبکہ تعلیمی اداروں کے مزید بندش کے حق میں نہیں ہے ہمارا مطالبہ ہے کہ تمام تعلیمی اداروں کو فلفور ایس اوپیز کیساتھ کھول دیا جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائرہ کار وسیع کرینگے 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -