حکومت کو غریب طلباء کا مستقبل تباہ کرنے نہیں دینگے،جے ٹی آئی

  حکومت کو غریب طلباء کا مستقبل تباہ کرنے نہیں دینگے،جے ٹی آئی

  

صوابی(بیورورپورٹ)جمعیت طلبہ اسلام ضلع صوابی نے حکومتی تعلیمی پالیسی کو یکسر مسترد کر تے ہوئے کہا کہ حکومت کو غریب طلباء کے مستقبل کو تباہ کرنے نہیں دینگے۔ اقتدار میں آنے سے قبل پی ٹی آئی کی قیادت ملک میں تعلیمی ایمر جنسی اور نوجوانوں کو جدید تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے بلند بانگ دعوے کر رہی تھی لیکن اقتدار میں آکر غریب عوام کے بچوں پر تعلیم کے دروازے بند کر رہی ہے ان خیالات کااظہار جے ٹی آئی کے ضلعی امیر مولانا محمد جاوید اور صوبائی سیکرٹری مالیات مولانا گوہر رحمن نے اخباری کانفرنس میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ کورونہ وائرس کی آڑ میں ملک بھر میں تعلیمی اداروں کو بند کرنا بچوں کا تعلیمی مستقبل تاریک کرنا ہے حکومت تعلیمی اداروں کو فی الفور کھول کر اس کے لئے اوقات مقرر کی جائے۔ بدھ کے روز ملک بھر میں جے ٹی آئی کے زیر اہتمام موجودہ تعلیمی پالیسی کے خلاف غریب طلبہ کی آواز بن کر تمام ضلعی ہیڈ کوارٹر میں احتجاجی مظاہرے کئے انہوں نے ضم شدہ اضلاع اور بلو چستان کے طلبہ کا پنجاب یونیورسٹی میں میڈیکل کوٹہ ستر سے کم کر کے 35کرنے کی مذمت کر تے ہوئے مطالبہ کیا کہ پسماندہ فاٹا اور بلو چستان کے طلباء کا میڈیکل کوٹہ بحال رکھا جائے۔ انہوں نے تعلیمی ادارو کی فیسوں میں بے تحاشا اضافے کو مسترد کر تے ہوئے کہا کہ ایک طرف ملک بھر کے غریب عوام حکومت کے ہاتھوں مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں جب کہ دوسری طرف تعلیمی اداروں کے فیسوں میں کئی گناہ اضافہ کر کے غریب بچوں پر تعلیم کے حصول کے دروازے بند کئے جارہے ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ملک بھر میں جلد از جلد تعلیمی ادارے کھولے جائیں فیسوں میں بے تحاشا اضافے کو واپس لیا جائے پنجاب یونیورسٹی میں بلو چستان اور ضم شدہ اضلاع کے میڈیکل اضلاع کے لئے ستر طلبہ کا کوٹہ بحال کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -