سگ گزیدگی سے متاثرہ افراد کا کیس لڑیں گے، حلیم عادل شیخ

      سگ گزیدگی سے متاثرہ افراد کا کیس لڑیں گے، حلیم عادل شیخ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)تحریک انصاف کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ نے کہاہے کہ پولیس کا سسٹم تباہ ہوگیاہے، سگ گزیدگی سے متاثرہ لوگ ہم سے رابطہ کریں، ہم ان کا کیس لڑیں گے۔سینٹرل جیل میں واقع انسداددہشت گردی کی عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پی ایس 88 الیکشن میں ووٹ کاسٹ کرنے گیا تھا، راستے پر مجھ پر حملہ کیا گیا۔ میری سیکیورٹی بھی واپس لے لی گئی ہے۔ مجھ پر حملہ ہوا اور مجھ پر ہی مقدمہ درج کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی سیاسی مخالفین کے لئے پولیس کی معاونت سے اے ٹی اے قانون کو بطور ہتھیار استعمال کررہی ہے۔ جسٹس آفتاب گورڑ کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی گئیں۔حلیم عادل شیخ نے کہاکہ عوام کی خدمت کرنا میرا کام ہے۔ ہر دوسرے دن عدالت میں ہوتا ہوں۔ کام کیسے کروں؟ سندھ میں پچیس لاکھ کتے ہیں۔ جسٹس آفتاب گورڑ کے فیصلے کے مطابق سگ گزیدگی سے متاثرہ پانچ لاکھ لوگوں کو معاوضہ دیا جائے۔ سگ گزیدگی سے متاثرہ لوگ ہم سے رابطہ کریں، ہم ان کا کیس لڑیں گے۔حلیم عادل شیخ نے کہا کہ پولیس کا سسٹم تباہ ہوگیا ہے۔ پولیس کا ایس پی وہی بنتا ہے، جو پیسے دیتا ہے۔ آج سیاسی کارکن خطرے میں ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -