برطانیہ میں میانمار کے سفارتخانے پر بھی فوجی اتاشی نے قبضہ کر لیا، سفیر بے دخل

برطانیہ میں میانمار کے سفارتخانے پر بھی فوجی اتاشی نے قبضہ کر لیا، سفیر بے ...
برطانیہ میں میانمار کے سفارتخانے پر بھی فوجی اتاشی نے قبضہ کر لیا، سفیر بے دخل
سورس:   Facebook

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) میانمار میں فوج کے اقتدار پر شب خون کے بعد برطانیہ میں میانمار کے سفارتخانے پر بھی فوجی اتاشی نے قبضہ کر لیا۔ میل آن لائن کے مطابق فوجی اتاشی نے سفارتخانے کا چارج سنبھال کر میانمار کے سفیرکیوزوارمن کو عمارت سے باہر نکال دیا اور دروازے بند کر لیے۔پولیس آفیسرز موقع پر پہنچے تاہم بین الاقوامی قوانین آڑے آ گئے اور وہ سفارتخانے کے اندر داخل نہ ہو سکے اور نہ ہی کیوزوارمن کی شنوائی ہو سکی۔

لندن کے مے فیئر کے علاقے میں واقع اس سفارتی عمارت کے باہر کئی مظاہرین بھی کیوزوار من کے ساتھ جا کر کھڑے ہو گئے۔ کیوزوار من سے جب معاملے کے متعلق پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ”اندر دفاعی اتاشی ہے، جس نے میرے سفارتخانے پر قبضہ کر لیا ہے۔ اسے میانمار سے براہ راست مارشل لاءحکومت کی طرف سے ہدایات مل رہی ہیں اور وہ ان پر عملدرآمد کر رہا ہے۔“

ان کا کہنا تھا کہ ”میں ساری رات سفارتخانے کے باہر کھڑا رہوں گا۔ یہ عمارت میری ہے۔“واضح رہے کہ کیوزوار من میانمار کی منتخب سیاسی لیڈر آنگ سان سوچی کے حامی اور مارشل لاءکے مخالف ہیں۔ میانمار میں بھی فوجی حکومت کے خلاف شدید احتجاج جاری ہے اور اب تک 600کے لگ بھگ لوگ ہلاک ہو چکے ہیں۔ ان میں بڑی تعداد فوج کی گولیوں کا نشانہ بنی۔

مزید :

برطانیہ -