جھگڑا شدت اختیا ر کر گیا،قطر عرب لیگ پر برس پڑا

جھگڑا شدت اختیا ر کر گیا،قطر عرب لیگ پر برس پڑا
جھگڑا شدت اختیا ر کر گیا،قطر عرب لیگ پر برس پڑا

  

دوحہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کی طرف سے شمالی عراق میں فوجی کارروائی کرنے پر عرب لیگ نے اس کے خلاف مذمتی بیان جاری کیا لیکن بین الاقوامی سفارتی حلقوں میں لوگ اس وقت چونک اٹھے جب قطر نے ترکی کے خلاف عرب لیگ کے بیان کو مسترد کردیا۔

قطری وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر نبیل العربی کی طرف سے ترکی کے خلاف مذمتی بیان پر وزارت خارجہ قطر کے تحفظات کا اظہار کرتی ہے۔ قطر کی طرف سے ترکی کے خلاف مذمتی بیان کو محض مسترد نہیں کیا گیا بلکہ ترکی کیلئے بھرپور حمایت کا اعلان بھی کردیا گیا۔ قطری وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں مزید کہا، ’’ڈاکٹر عربی کی طرف سے عرب لیگ کی ایماء پر جاری کئے جانے والے بیان کے اجراء سے پہلے رکن ممالک سے بات چیت نہیں کی گئی۔ قطر ترکی کی طرف سے اپنی سرحدوں کی حفاظت اور سلامتی و استحکام کے لئے کئے گئے اقدامات کی مکمل حمایت کرتا ہے۔‘‘ بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ ترکی اقوام متحدہ چارٹر کے آریکل 51 کے تحت اپنے دفاع اور اپنے لئے خطرات کے خاتمے کا حق رکھتا ہے۔

ترک فضائیہ کے جنگی طیاروں کی طرف سے شمالی عراق کے علاقوں میں متعدد حملے کئے گئے ہیں اور ترکی نے یہ کہہ کر اپنی فوجی کارروائیوں کا دفاع کیا ہے کہ کردستان ورکرز پارٹی (PKK) کے باغی ترکی کی سلامتی کے خلاف باغیانہ اقدامات کررہے ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

آئی فون ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

مزید : بین الاقوامی