وہ آدمی جو گزشتہ دو ماہ سے مسلسل ائیرپورٹ پر رہ رہا ہے کیونکہ۔۔۔

وہ آدمی جو گزشتہ دو ماہ سے مسلسل ائیرپورٹ پر رہ رہا ہے کیونکہ۔۔۔
وہ آدمی جو گزشتہ دو ماہ سے مسلسل ائیرپورٹ پر رہ رہا ہے کیونکہ۔۔۔

  

ماسکو (نیوز ڈیسک) مغربی دنیا میں جاپان کے بارے میں بہت مثبت رائے پائی جاتی ہے جبکہ روس کو بدترین آمریت کے طور پر دیکھا جاتا ہے، لیکن ایک جاپانی صحافی نے کچھ ایسا کردیا ہے کہ جاپان کا مثبت تاثر اور روس کا منفی تاثر ایک دوسرے کی جگہ لیتے دکھائی دیتے ہیں۔

چھتیس سالہ صحافی ٹیٹسویاآبو گزشتہ 2 ماہ سے روس کے شرمیتیووو ائیرپورٹ کے ٹرانزٹ سیکشن میں مقیم ہے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ اپنے وطن نہیں لوٹنا چاہتا کیونکہ وہاں سچ بولنے کی اجازت نہیں۔ آبو کا کہنا ہے کہ وہ ایک بڑی جاپانی امریکن کمپنی میں کام کرچکے ہیں اور بہت کچھ ایسا دیکھ چکے ہیں کہ جس کے بارے میں دنیا کو بتانا ضروری ہے، مگر جاپانی حکام انہیں بطور صحافی اس موضوع پر قلم اٹھانے کی اجازت نہیں دیتے۔ ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ جاپانی سمجھتے ہیں کہ ان کا طرز زندگی اور طرز عمل سو فیصد درست ہے لہٰذا کسی کو اس کے خلاف بات کرنے اور اس میں خامیاں ڈھونڈنے کی اجازت نہیں۔ آبو روسی شہریت لینے کیلئے کوشاں ہیں، لیکن تاحال ان کی سیاسی پناہ کی درخواست زیر غور ہے۔ وہ دو ماہ سے ایک ہی لباس پہنے ائیرپورٹ پر مقیم ہیں اور اب زندہ رہنے کیلئے لوگوں سے مدد کی اپیل بھی کررہے ہیں۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ دو سال قبل 2013ء میں سابق امریکی خفیہ ایجنٹ ایڈورڈ سناؤڈن بھی اپنی حکومت سے جان بچا کر سیاسی پناہ کیلئے روس آگئے۔ انہوں نے بھی اسی ائیرپورٹ پر 39 دن گزارے تھے، جس کے بعد انہیں سیاسی پناہ دے دی گئی تھی۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

آئی فون ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس