منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی اپ گریڈیشن‘پیداواری صلاحیت ایک ہزار 310 میگاواٹ ہوجائے گی

منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی اپ گریڈیشن‘پیداواری صلاحیت ایک ہزار 310 میگاواٹ ...

لاہور(کامرس رپورٹر)منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی اپ گریڈیشن منصوبے سے اس کی پیداواری استعداد 1000میگاواٹ سے بڑھ کر 1310 میگاواٹ ہو جائے گی ۔یہ بات چیئرمین واپڈا ظفر محمود کو منگلا ڈیم کے دورے پرایک بریفنگ کے دوران بتائی گئی۔ چیئرمین نے ہائیڈل پاور سٹیشن، ڈیم، سپل وے اورخالق آباد کے مقام پر ریزروائر رِم کا تفصیلی دورہ کیا۔ ممبر( پاور) واپڈا بدرالمنیر مرتضیٰ،جنرل منیجر منگلا ڈیم غلام سرور میمن اور دیگر سینئر آفیسرز بھی ان کے ہمراہ تھے۔دورے کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین واپڈا نے کہا کہ بجلی کی قلت پرقابو پانے اور بجلی کی قیمتوں میں کمی لانے کیلئے نیشنل گرڈ میں کم لاگت پن بجلی شامل کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ لہٰذا ضروری ہے کہ منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی اپ گریڈیشن منصوبے کو مقررہ مدت کے اندر مکمل کیا جائے۔ منگلا جھیل میں پانی کی آمد اور جھیل کی سطح کے پسِ منظر میں چیئرمین نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ جھیل کی بھرائی کیلئے تمام فریقین کے مقرر کردہ طریقہ کار پر سختی سے عمل کیا جائے ۔قبل ازیں جنرل منیجر منگلا ڈیم نے سیلاب کے دوران منگلا جھیل کی بھرائی کیلئے اختیار کئے جانے والے طریقہ کار کے متعلق بریفنگ دی۔ بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ ریزڈ منگلا ڈیم کو گذشتہ سال اپنی انتہائی سطح یعنی 1242 فٹ تک بھرا گیا تھا جس سے آبپاشی کیلئے 30 لاکھ ایکڑ فٹ اضافی پانی اور 62 کروڑ یونٹ اضافی کم لاگت پن بجلی پیدا ہوئی۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن سے مالی سال 2014-15ء کے دوران 6 ارب49 کروڑ 60 لاکھ یونٹ جبکہ 2013-14 ء میں 5 ارب 87 کروڑ 60 لاکھ یونٹ بجلی پیدا ہوئی تھی۔چیئرمین کو بتایا گیا کہ منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی اپ گریڈیشن منصوبے کو تین مراحل میں مکمل کیا جائے گا جس کے پی سی I- کی منظورشدہ لاگت 52 ارب 22 کروڑ 43 لاکھ روپے ہے۔ پراجیکٹ مکمل ہونے پر، منگلا ہائیڈل پاور سٹیشن کی موجودہ پیداواری صلاحیت میں 3 سو 10 میگاواٹ کا اضافہ ہوگا اور ہر سال ایک ارب 63 کروڑ 20 لاکھ یونٹ اضافی بجلی حاصل ہوگی۔یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ پاکستان کے پہلے بڑے آبی منصوبے منگلا ڈیم اور اس کے سو سو میگاواٹ کے چار یونٹوں پر مشتمل پاور ہاؤس کی تکمیل 1967ء میں ہوئی تھی۔ بعدازاں 1974ء میں دو اور 1981ء میں مزید دو یونٹوں کا اضافہ کیا گیا۔ 1994ء میں یونٹ نمبر 9اور 10کی تنصیب سے پاور ہاؤس اپنی انتہائی پیداواری صلاحیت یعنی 1000میگاواٹ تک پہنچ گیا۔ 1967ء سے اب تک منگلا پاور ہاؤس نیشنل گرڈ کو 210ارب یونٹ سے زائدسستی پن بجلی مہیا کرچکا ہے۔پاور ہاؤس کی مشینیں پرانی ہوجانے اور منگلا ڈیم ریزنگ پراجیکٹ کے بعد اضافی پانی کی دستیابی پر اب واپڈا مذکورہ پاور ہاؤس کو اپ گریڈ کررہا ہے۔

مزید : کامرس