کائنات تسخیر کرنے کی سوچ کا انجام بھیانک ہو گا،اصغر ندیم سید

کائنات تسخیر کرنے کی سوچ کا انجام بھیانک ہو گا،اصغر ندیم سید

لاہور( نمائندہ خصوصی)دانشوروں اور ادیبوں نے کہا ہے کہ کائنات تسخیر کرنے کی سوچ کا انجام بھیانک ہوگا ایٹمی قوتیں ہتھیار ختم کرکے غربت، افلاس، تعلیم و صحت کیلئے کام کریں ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر اصغر ندیم سید، ڈاکٹر اجمل نیازی، فرخ سہیل گوئندی، فاروق طارق اور بیاجی بیا سمیت دیگر مقررین نے کانفرنس کے آخری روز ادبی بیٹھک میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب کے میزبان رانا احتشام ربانی سمیت مقررین کا مزید کہنا تھا کہ ممالک ایٹمی دوڑ میں شامل ہونے کی کوشش کرکے تباہی کی جانب تیزی سے گامزن ہیں۔ ایٹم بم چلانے کی سوچ رکھنے والے ہیروشیما اور ناگاساکی میں ہولناک تباہی کو آنکھوں کے سامنے رکھیں۔ دانشوروں اور ادیبوں کا کہنا تھا کہ قدرت نے کائنات کو سرسبز بناکر پھولوں ، پھلوں جیسی خوبصورت چیزوں سے سجایا ہے لیکن موجودہ صدی میں ایٹم بم بنانے، سنبھالنے پر جتنا سرمایہ خرچ کیا جاتا ہے اگر یہی سرمایہ صحت، تعلیم اور غربت کے خاتمے کیلئے خرچ کیا جائے تو خدا اور مخلوق خدا خوش ہوجائے۔ تقریب میں ایٹمی ہتھیاروں کے خاتمے کیلئے کوشش کرنیوالی تنظیموں کے اراکین نے بھی شرکت اور خطاب کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1