جے یو آئی جمہوری عمل کے تسلسل کی حامی ہے اسی بنیاد پر قرار داد واپس لی،مولانا امجد

جے یو آئی جمہوری عمل کے تسلسل کی حامی ہے اسی بنیاد پر قرار داد واپس لی،مولانا ...

لاہور( نمائندہ خصوصی)جمعیت علماء اسلام جمہوری عمل کے تسلسل کی حامی ہے اسی بنیاد پر اپنی قرار داد واپس لی ہے پی ٹی آئی کی قیا دت کو ماضی کی تمام غلطیوں سے سبق سیکھنا چاہیے ،آنے والا مورخ جے یو آئی کے مؤقف کو درست لکھے گا یہ باتیں جے یو آئی کے قائم مقام سیکر ٹری جنرل مولانا محمد امجد خان نے میڈیا اور پارٹی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کہیں اس موقع پر مولانا سیف الدین سیف،مولا نا حافظ اشرف گجر،حافظ ابوبکر فہیم الدین،قاری نذیر احمد ،محمد افضل خان ،قاری مستاق احمد،جمال عبد الناصر ،شاہد اسرار ،حافظ غضنفر عزیز اور دیگر مو جو د تھے ایک سوال کے جواب میں انہو ں نے کہا کہ شاہ محمود قریشی بھی اعلانیہ نہ سہی آف ڈی ریکارڈگفتگو میں قرار دادکے حوالے سے جے یو آئی کے مؤقف کی تائید کریں ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریت کی گاڑی کو چلتا د یکھنا چاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ جے یو آئی کی قیادت نے سیا سی میدان میں شائستگی اور تحمل کا درس دیا ہے اور سیا ست کے میدان کے لیئے تحمل اور برد باری اور مستقل مزاجی بے حد ضروری ہے اور یہ راستہ سب کو اختیار کر نا ہو گا ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خورشید شاہ جے یو آئی کو ہی صرف نصحیتیں نہ کریں اور کچھ اپنے اچھے مشوروں سے پی ٹی آئی کو بھی نوازیں ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن نے ہمیشہ سنجیدہ تحمل اور اخلاق کی سیا ست کی ہے ۔

لیکن بد قسمتی سے پی ٹی آئی کی قیادت نے غیر سنجیدہ اور غیر اخلاقی رویہ اپنا یا ہے انہوں نے کہا کہ اس غیر سنجیدگی کا نتیجہ تھا کہ استعفوں اور ڈی سیٹ کے معاملے میں بیساکھیوں کا سہارا لینا پڑا انہوں نے کہا کہ قوم اپنے مسائل کا حل مانگتی ہے اب سب کو سر جوڑ کر مسائل کے حل کی طرف بڑھنا ہو گا انہوں نے کہا کہ پا کستان کی معیشت کی مضبوطی کے لیئے اقتصادی راہداری کا منصوبہ بہت اہمیت کا حامل ہے پوری قوم سیا سی اور مذہبی جماعتوں کواس منصوبے کی تکمیل کے لیئے دل و جان سے کرادارادا کر نا چاہیے ۔دریں اثناء جامعہ رحمانیہ میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مو لا نا محمد امجد خان نے کہا کہ معاشرہ سے کرپشن ،جرائم ،بدامنی اور اقراباپروری کاخاتمہ اسلامی تعلیمات سے ہی ممکن ہے انہوں نے کہا کہ اسلام نے دو اصول دیئے ہیں جن میں ایک فکرآخرت اور دوسرا خوف خدا ہے انہی دو اصولوں پر حکمرانوں سے لے کر معاشرے کے ہر فرد کو عمل کر نا ہوگا انہوں نے اسلام ابدی اور انقلابی نظام ہے اس نظام کے عملی نفاذ سے ہی ہر برائی کا خاتمہ ہو گا

مزید : میٹروپولیٹن 4