اہم ملکی تنصیبات پر خود کش حملوں کا خطرہ ،اسلام آباد اور لاہور میں سکیورٹی بڑھا دی گئی

اہم ملکی تنصیبات پر خود کش حملوں کا خطرہ ،اسلام آباد اور لاہور میں سکیورٹی ...

اسلام آباد/لاہور(اے این این) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور لاہوردہشتگردی کا خطرہ،سکیورٹی میں اضافہ کر دیا گیا،سکیورٹی اداروں نے کالعدم تحریک طالبان کے کمانڈر نزیر گروپ کی تیاریوں کی رپورٹ دے دی،حملے کے لئے 10خود کش بمبار اور دھماکہ خیز مواد سے بھری گاڑی استعمال کئے جانے کا خدشہ،خود کش حملے کے بعد عسکریت پسند بھی اہم تنصیبات میں داخل ہو سکتے ہیں،سکیورٹی اداروں کے افسران اور اہم تنصیبات دہشتگردوں کا ہدف ہو سکتے ہیں۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان خیبر ایجنسی کا کمانڈر نذیر گروپ دہشت گرد کارروائیوں کی تیاری کررہاہے سیکورٹی ذرائع نے بتایا ہے کہ کمانڈر نذیر گروپ کو دہشت گر د کار وائیوں میں خیبر ایجنسی اور درہ آدم خیل کے عسکری عناصر کی معاونت بھی حاصل ہو سکتی ہے۔ سیکورٹی ذرائع نے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹی ٹی پی خیبر ایجنسی کمانڈر نذیرگروپ حملے کے لئے خود کش جیکٹس سے لیس 10 عسکریت پسند استعمال کر سکتا ہے ۔حملہ کے لئے بارود سے بھری دھماکہ خیز گاڑی بھی استعمال کی جا سکتی ہے اوراس کے پیچھے دیگر عسکریت پسند بھی اہم تنصیبات میں داخل ہو سکتے ہیں۔سیکیورٹی ذرائع کے مطابق حملہ آور دہشت گردی کی کارروائیوں میں قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کے اہلکاروں،افسران اور اہم تنصیبا ت کو نشانہ بناسکتے ہیں۔ عسکریت پسند سیکورٹی اور حکومتی اہلکاروں کے حلیے میں ٹارگٹ تک پہنچنے کی کوشش کریں گے ، سیکورٹی ذرائع کے مطابق اسلام آباد اور پنجاب میں سرکاری تنصیبات اور حساس مقامات کے گرد سیکورٹی بڑھا دی گئی ہے۔

مزید : صفحہ اول