حج بحران، ذمہ دارڈی جی حج یا وفاقی سیکرٹری ؟نئی بحث چھڑ گئی

حج بحران، ذمہ دارڈی جی حج یا وفاقی سیکرٹری ؟نئی بحث چھڑ گئی

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)حج بحران کے ذمہ دار ڈی جی حج مکہ سید ابو عاطف ہیں یا وفاقی سیکرری مذہبی امور سہیل عامر مرزا ،نئی بحث شروع ہو گئی،دونوں افسران ذمہ داری لینے کے لیے تیار نہیں ،بحران نے چاروں اطراف سے گھیر لیا ہے،16اگست سے حج آپریشن شروع ہو رہا ہے 8دن میں دو چھٹیاں آ گئی ہیں 6دنوں میں کیسے حج ویزے لگیں گے حج آپریشن آغاز سے ہی متاثر ہونے کا امکان،کروڑوں روپے کا آئی ٹی کا سامان خریدنے کے باوجود وفاقی سیکرٹری کوئی سسٹم نہیں بنوا سکے نا اہلی کس کی ہے ذمہ داری کون لے گا اگر16اگست کی فلائٹ نہ جا سکیں تو سعودی عرب میں مکہ کے ہوٹل کا کرایہ کون دے گا ،16اگست سے شروع ہونے والے حج اپریشن کا شیڈول فائنل ہو چکا ہے ،جدہ ائیر پورٹ پر خصوصی ٹرمینل قائم ہو چکا ہے وفاقی سیکرٹری مذہبی امور کی ٹیم ابھی تک موفعہ سسٹم قائم نہیں کر سکی وزارت مذہبی امور کے ذمہ دار دعویٰ کر رہے ہیں آج ای کوڈ جاری کریں گے ،کب سعودی وزارت کو موفعہ بھیجیں گے منظوری ہو گی اور سعودی قونصلیٹ میں پاسپورٹ جمع ہوں گے وزارت مذہبی امور سے متعلقہ اہلکار بھی وفاقی سیکرٹری کو ذمہ دار قرار دے رہے ہیں ان کا کہنا ہے انہیں پتہ تھا 2015ء کا حج ای حج ہو گا ڈی جی حج نے بہت پہلے بتا دیا تھا سارا کام اسلام آباد کا ہے، معلوم ہوا ہے وزیر اعظم کے مشیر عرفان صدیقی کی بریفنگ کے بعد ڈی جی حج کو ہٹا دیا گیا ہے دیگر تبادلے اور برطرفیاں بھی متوقع ہیں۔

مزید : صفحہ اول