کٹھ پتلی سپیکر کو مدعو نہ کرنے پر بھارت کی دولت مشترکہ اجلاس کے بائیکاٹ کی دھمکی

کٹھ پتلی سپیکر کو مدعو نہ کرنے پر بھارت کی دولت مشترکہ اجلاس کے بائیکاٹ کی ...

نئی دہلی ( اے این این ) بھارت نے بھونڈا جواز پکڑ کر اسلام آباد میں دولت مشترکہ اجلاس کے بائیکاٹ کی دھمکی دے دی،مقبوضہ کشمیر کے کٹھ پتلی سپیکر کو بھی دولت مشترکہ کے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس میں شرکت کی دعوت کا مطالبہ۔بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارت مقبوضہ جموں کشمیر کے سپیکر کٹھ پتلی اسمبلی کوبھی اگلے ماہ اسلام آبا د میں منعقد ہونے والے دولت مشترکہ کے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس میں مدعو نہ کرنے پر اجلاس کا بائیکاٹ کرے گا ۔بھارتی لوک سبھا کی سپیکر سمترا مہاجن نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ آج بھارت کی تمام ریاستی اسمبلیوں کے سپیکرز کا اجلاس ہوا جس میں متفقہ طورپر یہ فیصلہ کیاگیا کہ بھارت دولت مشترکہ کے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس کا بائیکاٹ کرے گا اگر مقبوضہ جموں کشمیر اسمبلی کے سپیکر کو اجلاس میں مدعو نہیں کیاگیا ۔واضح رہے کہ اگلے ماہ 30ستمبر سے 8اکتوبر تک دولت مشترکہ کے پارلیمانی رہنماؤں کااجلاس اسلام آباد میں طلب کیاگیاہے جس میں شرکت کیلئے بھارتی کی تمام ریاستی اسمبلیوں کے سپیکرز کوشرکت کے دعوت نامے بھیج دیئے گئے ہیں لیکن بھارت نے متنازعہ مقبوضہ جموں کشمیر کی کٹھ پتلی اسمبلی کے سپیکر کو مدعو نہ کرنے پر بھارت نے نام نہاد جواز بناکراجلاس میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیاہے ۔

مزید : صفحہ اول