وزیر اعظم نواز شریف 10اگست کوتین روزہ سرکاری دورہ پر بیلاروس پہنچیں

وزیر اعظم نواز شریف 10اگست کوتین روزہ سرکاری دورہ پر بیلاروس پہنچیں

منسک (ڈی این ڈی) وزیر اعظم محمد نواز شریف 10اگست بروز پیر کو تین روزہ سرکاری دورہ پر بیلارس کے دارلحکومت منسک پہنچیں گے جہاں ان کا پرتپاک استقبال کیا جائے گا۔ یہ کسی بھی پاکستانی وزیراعظم کا جمہوریہ بیلا روس کا یہ پہلا دورہ ہے۔بیلاروسی حکام کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف کا یہ تاریخی دورہ بیلا روس کی خارجہ پالیسی کے ایک نئے باب کا آغاز کرے گا۔ بیلا روسی دفتر خارجہ وزیر اعظم نواز شریف کے آئندہ دورے کو بیلاروس کی خارجہ پالیسی کی ایک بہت بڑی کامیابی سمجھ رہا ہے کیونکہ پاکستان ایک اٹیمی طاقت ہونے کے ساتھ ساتھ جنوبی ایشیاء میں ایک ابھرتی ہوئی معیشت کے طور پر جانا جاتا ہے۔اگرچہ بیلا روس جغرافیائی لحاظ سے پاکستان اور چین کے ساتھ منسلک نہیں ہے پھر بھی اس کی خواہش ہے کہ اسے اخلاقی طور پر پاکستان چین اقتصادی راہداری کے ساتھ ملایاجائے۔بیلاروسی معیشت ہیوی مکینیکل اور زرعی آلات کی مینوفیکچرنگ کے لئے جانا جاتی ہے جبکہ پاکستان بنیادی طور پر ایک زرعی ملک ہے اور تاریخی طور پر بیلاروس پاکستان کو ٹریکٹر اور فصل کی کٹائی والے اوزار درآمد کر تا رہا ہے۔یہ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ہیوی مکینیکل صنعت کے شعبے میں دونوں ممالک کے درمیان کوئی جوائنٹ وینچرمعاہدہ طے پا سکتا ہے۔بیلا روس کے ایک سینئر عہدیدار نے ڈی این ڈی کو بتایا کہ ’’ صدر الیگزینڈر لوکاشینکو مئی میں دورہ اسلام آباد میں اپنے شاندار استقبال سے بہت متاثر ہوئے اور انہوں نے وزیر اعظم نواز شریف کا تاریخی استقبال کرنے کے لئے احکامات جاری کر دیئے ہیں۔صدارتی دفتر میں ایک خصوصی ونگ قائم کیا گیا ہے جو کہ وزیر اعظم نواز شریف کے استقبال کے سلسلے میں کئے جا رہے انتظامات کی نگرانی کر رہا ہے۔‘‘

مزید : صفحہ اول