این اے 118دھاندلی کیس : 10ہزار شناختی کارڈناقابل شناخت ہیں ،نادرا افسروں کا الیکشن ٹربیونل میں بیان

این اے 118دھاندلی کیس : 10ہزار شناختی کارڈناقابل شناخت ہیں ،نادرا افسروں کا ...
این اے 118دھاندلی کیس : 10ہزار شناختی کارڈناقابل شناخت ہیں ،نادرا افسروں کا الیکشن ٹربیونل میں بیان

  

لاہور(نامہ نگار)الیکشن ٹربیونل کاظم علی ملک کے روبرواین اے 118دھاندلی کیس میں نادرا کے ڈپٹی ڈائریکٹر جنید اور میجر مقتدر نے اپنی شہادتیں قلمبندکروادیں،انہوں نے جرح کے دوران بتایا کہ 10 ہزار ووٹوں پر درج شناختی کارڈز اور انگوٹھو ں کے نشانات کی شناخت نہ ہوسکی ،حلقہ این اے 118سے تحریک انصاف کے امید وار حامد زمان نے 2013ءمیں مسلم لیگ (ن )کے ایم این اے ملک محمد ریاض کے خلاف انتخابی عذر داری دائر کی تھی ،درخواست گزار کی استدعا پر نادرانے ریکارڈ کی فرانزک سکیننگ رپورٹ الیکشن ٹربیونل میں پیش کی ۔گزشتہ روز ڈپٹی ڈائریکٹر نادرا جنید شوکت اور میجر مقتدر مذکورہ رپورٹ پر شہادت قلمبند کرانے الیکشن ٹربیونل میں پیش ہوئے ،انہوں نے اپنا تحریری بیان عدالت میں پیش کیا جس پر حامد زمان کے وکیل انیس علی ہاشمی نے جرح کی۔ نادرا حکام نے اعتراف کیا کہ 10ہزار ووٹ ایسے شناختی کارڈ زپر ڈالے گئے جو نادرا کے ڈیٹا بیس میں ناقابل شناخت پائے گئے جبکہ 745کاﺅنٹرفائلزپر انگوٹھوں کے نشانات کی بھی شناخت نہیں ہو سکی۔حامد زمان کے وکیل کا کہنا تھا کہ بڑے پیمانے پر دھاندلی ہوئی نادرا حکام نے پورا سچ نہیں بولا اور بہت سے سوالات کے جوابات ان کےپاس نہیں تھے۔الیکشن ٹربیونل نے کیس کی سماعت 15اگست تک ملتوی کی دی۔ آئندہ تاریخ پر فریقین کے و کلاءکیس پر حتمی بحث کریں گے ۔

مزید : لاہور /اہم خبریں