صادق آباد میں مغوی نوجوان پربرہنہ کرکے باربار بدترین تشدد ، گنداپانی پلایا گیا ،ملزمان ویڈیو بھی بناتے رہے

صادق آباد میں مغوی نوجوان پربرہنہ کرکے باربار بدترین تشدد ، گنداپانی پلایا ...
صادق آباد میں مغوی نوجوان پربرہنہ کرکے باربار بدترین تشدد ، گنداپانی پلایا گیا ،ملزمان ویڈیو بھی بناتے رہے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

صادق آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)بااثر ملزمان نے محنت کش مغوی نوجوان کو برہنہ کر کے ڈنڈوں سے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا ، چار روز تک گندے نالے کا پانی پلاتے رہے اور ویڈیو بھی بناتے رہے ، حالت غیر ہونے پر ویرانے میں پھینک گئے۔ تفصیلات کے مطابق صادق آباد میں مغوی نوجوان پر انسانیت سوز تشدد کی ویڈیو انٹرنیٹ پر ڈال دی گئی، ویڈیو میں انتہائی شرمناک اور پرسوز مناظر دکھائے گئے ہیں ، ملزمان نوجوان کو بار بار ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بنا تے رہے اور بار بار کپڑے اتروا کر بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا ۔ ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ ملزمان نہ

صرف مغوی نوجوان کو برہنہ کرتے اور ڈنڈوں سے پیٹتے بلکہ گندے نالے کا پانی بھی پلاتے جس سے بار بار اس کی حالت غیر ہوتی رہی ۔ ملزما ن کے چہرے ویڈیو میں واضح ہیں تاحال پولیس کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ برگر کی دوکان پر دو گروپوں میں لڑائی ہوئی تھی جس کے بعد اس محنت کش کو اغواءکر لیا گیااور اس کے اہل خانہ سے ایک لاکھ روپے تاوان طلب کیا گیا ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ملزمان کافی بااثر ہیں ، وہ مغوی نوجوان کو اپنے ڈیرے پر لے گئے تھے ۔ ذرائع نے بتایا کہ چار روز کے انسانیت سوز سلوک اور تضحیک کے بعد مغوی نوجوان کی حالت انتہائی غیر ہونے پر ملزمان اسے غوثیہ چوک کے قریب ویرانے میں پھینک کر فرار ہو گئے ۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ اسے چار روز تک گندے نالے کا پانی پلایا جا تا رہا اور کھانے کوکچھ بھی نہیں دیا گیا۔

مقامی پولیس حکام کاکہنا ہے کہ مغوی نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے والے ملزمان کی شناخت ہو گئی اور ان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے ان کی گرفتاری کے لئے ان کے گھروں میں چھاپے مار رہے ہیں ۔

مزید : رحیم یارخان /اہم خبریں