سعودی حکومت کا وہ فیصلہ جس کیخلاف مقامی اور غیر ملکی شہری ایک ہو گئے ،بھرپور احتجاج

سعودی حکومت کا وہ فیصلہ جس کیخلاف مقامی اور غیر ملکی شہری ایک ہو گئے ،بھرپور ...
سعودی حکومت کا وہ فیصلہ جس کیخلاف مقامی اور غیر ملکی شہری ایک ہو گئے ،بھرپور احتجاج

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں غیر ملکی والدین کے بچوں کی بڑی تعداد انٹرنیشنل اور پرائیویٹ سکولوں میں زیر تعلیم ہے اور ان سکولوں نے والدین کو اچانک فیس میں اضافے کی خبر سنا کر شدید صدمے سے دوچار کردیا ہے۔

’عرب نیوز‘ کے مطابق سکولوں کا موقف ہے کہ وزارت تعلیم کے ساتھ باقاعدہ معاہدے کے بعد والدین کو فیس میں اضافے کے متعلق مطلع کیا گیا ہے جبکہ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ فیس میں اضافہ 1000 ریال (تقریباً 27 ہزار پاکستانی روپے) سے زیادہ نہیں ہے۔ دوسری جانب والدین کا کہنا ہے کہ اگر انہیں اضافے کے متعلق پہلے خبر کردیجاتی تو وہ کوئی متبادل ڈھونڈ لیتے۔ سکولوں کی طرف سے فیسوں میں اضافے کو بجا قرار دیتے ہوئے وضاحت کی گئی ہے کہ سہولتوں اور خدمات میں بہتری کی وجہ سے فیسیں بڑھانا ضروری ہوگیا تھا۔

والدین کی طرف سے سخت پریشانی اور عدم اطمینان کے باوجود فیسوں میں کمی کے بارے میں تاحال کوئی اطلاع سامنے نہیں آئی، البتہ پرائیویٹ ایجوکیشن ڈائریکٹوریٹ کا کہنا ہے کہ اگر والدین فیسوں میں اضافے کے ساتھ متفق نہیں تو وہ وزارت تعلیم کی ویب سائٹ پر شکایت کرسکتے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی