’میاں بیوی کا جھگڑا سلجھانے کیلئے ایمبولنس کا استعمال‘

’میاں بیوی کا جھگڑا سلجھانے کیلئے ایمبولنس کا استعمال‘
’میاں بیوی کا جھگڑا سلجھانے کیلئے ایمبولنس کا استعمال‘

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا بھر میں ایمبولینس سروس مریضوں کو ہسپتال پہنچانے کے لیے استعمال کی جاتی ہے لیکن دبئی کے شہریوں نے اس کا نیا استعمال دریافت کر لیا ہے۔ گزشتہ روز دبئی میں ایک میاں بیوی میں جھگڑا ہو رہا تھا، انہوں نے جھگڑا ختم کرنے کے لیے ایمبولینس سروس کو کال کر دی۔ ایمبولینس سروس والوں نے سمجھا کہ اس جگہ پر شاید دو گروپوں میں خونریز تصادم ہو رہا ہے، اس لیے انہوں نے پوری میڈیکل ٹیم کے ہمراہ ایمبولینس روانہ کر دی۔ جب عملہ وہاں پہنچا تو دیکھ کر حیران رہ گیا کہ میاں بیوی نے آسمان سر پر اٹھا رکھا تھا۔ 

دبئی کارپوریشن فار ایمبولینس سروس(DCAS)کے حکام کا کہنا ہے کہ انہیں اکثر ایسی جعلی کالز آتی رہتی ہیں۔ جب بھی کسی میاں بیوی میں جھگڑا ہوتا ہے تو وہ ہمیں فون کر دیتے ہیں جس سے ہمارا بہت سا وقت اور فنڈز ضائع ہوتے ہیں۔ حکام کا کہنا تھا کہ میاں بیوی کے جھگڑے کے علاوہ بھی عمومی گھریلو تلخیوں پر بھی ہمیں کال کر دی جاتی ہے، انہوں نے بتایا کہ ہمیں گزشتہ دنوں ایک لڑکی نے فون کال کی، ہم ایمرجنسی میں پہنچے تو پتا چلا کہ لڑکی کو اس کے گھر والے اس دن گھر سے باہر جانے کی اجازت نہیں دے رہے تھے کیونکہ لڑکی ہسٹریا کی مریض تھی اور گھر والوں کا خیال تھا کہ آج اسے دورہ پڑ سکتا ہے۔

حکام نے بتایا کہ ایک دفعہ ہمیں ایک کمپنی سے فون کال آئی اور بتایا گیا کہ ان کا ایک ملازم بے ہوش ہو گیا ہے۔ جب ہم جائے وقوعہ پر پہنچے اور مرض کا طبی معائنہ کیا تو پتا چلا کہ وہ ڈرامہ کر رہا تھا، اصل میں وہ دفتر سے چھٹی لینا چاہتا تھا جس کے لیے اس نے بے ہوش ہونے کا سوانگ رچا لیا۔ حکام کے مطابق انہیں روزانہ کی بنیاد پر ایسی جعلی کالز موصول ہوتی رہتی ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس