آپ کے موبائل کے ذریعے انجان لوگ آپ کی ہر بات سن اور ریکارڈ کر سکتے ہیں ،ایسے کیسے ممکن ہے اور اس سے بچا کیسے جاسکتاہے؟انتہائی ضروری معلومات

آپ کے موبائل کے ذریعے انجان لوگ آپ کی ہر بات سن اور ریکارڈ کر سکتے ہیں ،ایسے ...
آپ کے موبائل کے ذریعے انجان لوگ آپ کی ہر بات سن اور ریکارڈ کر سکتے ہیں ،ایسے کیسے ممکن ہے اور اس سے بچا کیسے جاسکتاہے؟انتہائی ضروری معلومات

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ایپل کا فون آپریٹنگ سسٹم آئی او ایس اورگوگل کا اینڈرائیڈ دنیا کے 2مقبول ترین موبائل فون آپریٹنگ سسٹم ہیں۔ کل ہم نے آپ کو ایپل کے آپریٹنگ سسٹم میں موجود خامیوں اور اس کے ہائی جیک ہونے کے خدشے کے متعلق آگاہ کیا تھا۔ آج ہم آپ کو اینڈرائیڈ کے بارے میں بتانے جا رہے ہیں جس کے متعلق انکشاف ہوا ہے کہ اسے ہائی جیک کرنا آئی او ایس سے کہیں زیادہ آسان ہے۔ ہیکرز نے دعویٰ کیا ہے کہ اینڈرائیڈ فونز مینوفیکچررز کے انسٹال کیے گئے سافٹ ویئر کے ذریعے ہی ہائی جیک کیے جا سکتے ہیں اور اس کے ذریعے نہ صرف ان کا ذاتی مواد چوری کیا جا سکتا ہے بلکہ ان کی فون کالز بھی سنی جا سکتی ہیں۔

ماہرین نے اس حوالے سے بتایا ہے کہ اینڈرائیڈ فونز میں ایپلی کیشنز کو ڈیجیٹل سرٹیفکیٹس کے ذریعے موبائل فون تک خصوصی رسائی دی جاتی ہیے اور ہیکرز اسی کا فائدہ اٹھاتے ہیں اوراپنی جعلی ایپلی کیشنز کے ذریعے پورا موبائل فون ہی ہیک کر لیتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ایچ ٹی سی، ایل جی، سام سنگ اور زیڈ ٹی ای کے بعض ماڈلز میں ہائی جیکنگ کا یہ خطرہ بہت زیادہ ہے۔موبائل فونز کو درپیش خطرات سے نمٹنے والی ایک ٹیم ”چیک پوائنٹ“ کا کہنا ہے کہ متعلقہ کمپنیوں کو خطرے سے آگاہ کر دیا گیا ہے اور وہ اپنے ان ماڈلز میں سے خامیاں دور کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔ چیک پوائنٹ کے حکام نے بتایا کہ انہوں نے ایک ایسی ایپلی کیشن بنائی ہے جو صارفین کو بتائے گی کہ ان کے فون پر ہیکرز کا حملہ کتنا کارگر ہو سکتا ہے اور آیا اس سے قبل بھی ان کے فون پر ہیکرز حملہ کر چکے ہیں یا نہیں۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی