جعلی رجسٹری پر کروڑوں روپے کی سرمایہ کاری اراضی ، ہتھیانے کی کوشش ، پٹواری معطل

جعلی رجسٹری پر کروڑوں روپے کی سرمایہ کاری اراضی ، ہتھیانے کی کوشش ، پٹواری ...

  



لاہور(اپنے نمائندے سے)اسسٹنٹ کمشنر سٹی کی بروقت کارروائی ،پنجاب حکومت کا ڈیڑھ کروڑکیش بچا لیامزید معلوم ہوا ہے کہ تحصیل سٹی کے پٹوار سرکل جیا موسیٰ کے پٹواری محمد الطاف نے ایل ڈی اے کی لینڈ ایکوزیشن کے پٹواری رانا شمس کے ساتھ ساز باز کرتے ہوئے اورنج ٹرین پراجیکٹ کے ذریعے معاوضہ لینے اور پنجاب حکومت کے سرکاری خزانے پر ہاتھ صاف کرنے کے لئے منصوبہ بندی مرتب کی اور صوبائی حکومت کی نو کنال اراضی ہتھیانے کے لئے جعلی رجسٹری تیار کی گئی اور اس کی بنیاد پر فوری طورپر ٹمبر مارکیٹ ایکٹ سے ملحقہ زمین کا انتقال نمبر 19873درج کرتے ہوئے تصدیق بھی کروا لیا ،پرچہ رجسٹری 1985کی تیار کی گئی اور اس حوالے سے پٹواری لینڈ ایکوزیشن رانا شمس نے ایل ڈی اے میں ڈیڑھ کروڑ روپے کا معاوضہ چیک بھی تیار کروا لیا جس کی اطلاع ملنے پر اسسٹنٹ کمشنر سٹی عبداللہ خرم نیازی بروقت کارروائی کرتے ہوئے ریونیو ریکارڈکی جانچ پڑتال کی تو جعلسازی اور ریکارڈ میں کی جانے والی ردوبدل عیاں ہو گی،اسسٹنٹ کمشنر سٹی عبداللہ خرم نیازی نے روزنامہ پاکستان کو آگاہی دیتے ہوئے بتایا کہ رجسٹری جعلی تیار کی گئی اور پٹواری جیاموسیٰ الطاف اس میں ملوث ہے قانونگو اور ریونیو افسر کے کردار کے حوالے سے تحقیقات جاری ہے پٹواری جیاموسیٰ کو فوری معطل کر دیا ۔دوسری جانب ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ ایل ڈی اے لینڈ ایکوزیشن میں تعینات پٹواریوں کے ساتھ ساز باز کرتے ہوئے سینکڑوں فرضی مالکان اور کھاتہ جات کے ذریعے سرکاری خزانے سے کروڑوں روپے ہڑپ کر چکے ہیں جس کی محکمہ اینٹی کرپشن اور نیب میں تحقیقات لازم ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...