تورڈھیر میں ناروا لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

تورڈھیر میں ناروا لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  



تورڈھیر(نمائندہ خصوصی)مانکی فیڈر پر رُکے ہوئے کام، اُوربلنگ اورناروالوڈشیڈنگ کے خلاف تورڈھیر،جلبئی اورمانکی کے عوام نے پیرکے روز تورڈھیرشہرمیں زبردست مشترکہ پرامن احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرہ میں پی ٹی آئی، اے این پی اورجے یوآئی (ف) کے مقامی رہنماؤں نے متفقہ طور پر بھرپور شرکت کی، مظاہرین کی قیادت تحصیل ناظم لاہور سہیل خان، تحصیل ممبرمستجاب خان ایڈوکیٹ،عرفان شیرخان، ڈاکٹرفضل الٰہی،سیدظہور باچا،اعجازعلی خان،ناظم محمدکامران،ناظم مولانافیض الحسن، فرحان خان اوردیگرمتعدد منتخب بلدیاتی نمائندے کررہے تھے، واپڈاسب ڈویژن تورڈھیرکے سامنے مین جہانگیرہ صوابی روڈ 2 گھنٹے بلاک رکھی گئی، محکمہ واپڈا ، واپڈاایکسئین ٹو صوابی، اورمقامی سب ڈویژن کے ایس ڈی او اورسپرنڈنٹ کے خلاف شدید نعرہ بازی اورانکے فوری تبادلے کاپرزورمطالبہ کیا گیا،احتجاج کی کال دو دن پہلے دئیے جانے کے پیش نظر تورڈھیرسب ڈویژن کے دفاترپیرکے روز صبح سے کھولے ہی نہیں گئے جبکہ عملہ کے چند اہلکارسپرنڈنٹ کے ہمراہ دفاتر سے ملحقہ حجرہ (مرحوم)شیرزمان شیرمیں بیٹھے مظاہرہ کانظارہ کررہے تھے،اورکسی بھی ناخوشگوارحالات سے بھروقت نمٹنے کیلئے ڈی ایس پی سرکل لاہورکی قیادت میں تھانہ تورڈھیر، تھانہ چھوٹا لاہور،پولیس چوکی شیرآباد و جہانگیرہ کی بھاری نفری ضروری سیکورٹی آلات کے ہمراہ موقع پر موجود رہی،ڈ ی سی صوابی معتصم باللہ کی ہدایات پر اے سی لاہور گوہرعلی خان فوری طورموقع پر پہنچنے اورانکی سپرداری میں ایس ڈی اوسب ڈویژن تورڈھیر ساجد خان کی جانب سے تین ہفتوں میں مانکی فیڈرکی لائن پر جاری کام مکمل کرانے کی تحریری یقین دہانی پر پرامن مظاہرین منتشر ہوگئے واضح رہے کہ سپیکر اسدقیصر کے اعلان کردہ منصوبہ مانکی فیڈرپرجاری کام گزشتہ کئی ہفتوں سے بلا وجہ روکا گیا ہے اور تورڈھیر وجلبئی فیڈر نہایت اُورلوڈ ہونے کیوجہ سے تورڈھیر،جلبئی،مانکی اور اسکے مضافات پر غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے اس سلسلے میں واپڈاکے مقامی اہلکاروں سے یہ بھی سنا گیا کہ ایک تومانکی فیڈر کی لائننگ کیلئے تاریں ختم ہوگئی ہیں جبکہ دوسری جانب گرمی کی جاری شدت میں لائن پر کام کرنے کیلئے روزانہ صبح تا سہ پہر پانچ چھ گھنٹے بجلی بند کرانی سے بھی صارفین کو الگ اذیت اٹھانا پڑیگی اسلئے سوچا گیا ہے کہ گرمی کا زور کم پڑنے پرہی دوبارہ کام کا آغازکرنا مناسب ہوگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر