واڑی میں جنگل کی غیر قانونی کٹائی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

واڑی میں جنگل کی غیر قانونی کٹائی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  



واڑی(نمائندہ پاکستان)واڑی کے علاقہ نہاگ درہ ماتاڑ کے سینکڑوں افراد نے جنگل کی غیر قانونی کٹائی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرکے دیرپشاور شاہراہ کو ھرقسم کی ٹریفک کے لئے بند کیا اور مقامی پولیس و فارسٹ حکام کے خلاف شدید نعرے بازی کی ہے مظاہرین نے الٹی میٹم دیاہے کہ اگر چوبیس گھنٹے کے اندر اندر جنگل کو نقصان پہنچانے والے عناصر گرفتار اور غیر قانونی مشینری سرکاری تحویل میں نہ لیا گیا تو ڈپٹی کمشنر آفس کے سامنے دھرنا دیں گے ،مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ماتاڑ کے عمائدین ملک شاہ نواز خان ،ملک شیر عظیم ،ملک پاس محمد و دیگر نے کہا کہ ایک منظم سازش کے زریعے بلا ضرورت سڑک تعمیر کرنے کے آڑ میں بھاری مشینری اور چینسہ مشینوں کے زریعے ہمارے قدرتی جنگل کو بے دردی سے کاٹنے کا سلسلہ جاری ہے جس پر مقامی پولیس اور فارسٹ حکام نے چشم پوشی اختیار کرلی ہے جس کی وجہ سے علاقہ عوام میں تشویش پائی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ قیمتی درختوں کی تہہ تیغ سے نہ صرف جنگل چٹیل میدان میں تبدیل ہورہا ہے بلکہ چھوٹے پودے پتھر گرنے سے بوسیدہ ہوکر نسل کشی ہورہی ہیں جوکہ ظلم و زیادتی کا انتہا ہے ،مظاہرین نے بڈالئی نامی گاوں پر علاقے میں انتشار پھیلانے کا الزام لگاتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ماتاڑ جنگل کے کٹائی میں ملوث عناصر کو چوبیس گھنٹے کے اندر گرفتار کرائے جائے اور غیر قانونی مشینری سمیت چینسہ مشینوں کو سرکاری تحویل میں لیاجائے بصورت دیگر علاقے کے عوام ڈی سی آفس کے سامنے غیر معینہ مدت تک احتجاجی دھرنا دیگی جس کی تمام تر زمہ داری ضلعی انتظامیہ پر عائد ہوگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...