سانحہ سول ہسپتال کوئٹہ کو ایک سال مکمل، وکلا کا بلوچستان بھر میں عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ، بار رومز پر سیاہ پرچم آویزاں،تعلیمی اداروں میں عام تعطیل ،شٹرڈاﺅن ہڑتال

سانحہ سول ہسپتال کوئٹہ کو ایک سال مکمل، وکلا کا بلوچستان بھر میں عدالتی ...
سانحہ سول ہسپتال کوئٹہ کو ایک سال مکمل، وکلا کا بلوچستان بھر میں عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ، بار رومز پر سیاہ پرچم آویزاں،تعلیمی اداروں میں عام تعطیل ،شٹرڈاﺅن ہڑتال

  



کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)سانحہ سول ہسپتال کوئٹہ کو ایک سال مکمل ہو گیا،بلوچستان بھرمیں وکلاکی جانب سے عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ اوریوم سیاہ منایا جا رہا ہے، بائیکاٹ کے باعث وکلاعدالتوں میں پیش نہیں ہورہے جبکہ ضلع کچہری سمیت عدالتوں میں باررومزپرسیاہ پرچم لہرادیئے گئے، دوسری جانب شہرمیں صوبائی حکومت کی جانب سے تعلیمی اداروں میں عام تعطیل کا اعلان کیا گیا تھا اورشہرمیں شٹرڈاو¿ن ہڑتال کی وجہ سے کاروباری مراکزاوربازاربندہیں ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال سانحہ سول ہسپتال میں 56وکلاسمیت 73افرادجاں بحق اور 100سے زائدوکلااوردیگرافرادزخمی ہوئے تھے، واقعہ کے ایک سال مکمل ہونے پر ہائی کورٹ کے احاطے میں وکلاکی جانب سے کنونشن کا انعقاد کیا گیا جس میں وکلاءنے شہدا کو خراج عقیدت پیش کیا ادھر پشاور میں بھی وکلا ءکی جانب سے ہائیکورٹ اور ماتحت عدالتوں کا بائیکاٹ کیا گیا اور وکلا عدالتوں میں پیش نہیں ہوئے پشاور میں عدالتوں میں ہڑتال پاکستان بار کونسل کی کال پر کی جا رہی ہے۔

مزید : کوئٹہ