نائن الیون کا نشانہ بننے والے شخص کی 16 سال بعد شناخت

نائن الیون کا نشانہ بننے والے شخص کی 16 سال بعد شناخت
نائن الیون کا نشانہ بننے والے شخص کی 16 سال بعد شناخت

  



نیویارک(این این آئی)نیویارک کے ورلڈ ٹریڈ سینٹر 9/11پر 11 ستمبر 2001کے دہشت گرد حملوں میں ہلاک ہونے والے ایک شخص کی باقیات کو 16 سال کے بعد شناخت کر لیا گیا ہے۔

افغان طالبان نے صرائے پل واقعہ میں ملوث ہونے کی تردید کردی

امریکی ٹی وی کے مطابق سٹی میڈیکل ایگزامینر کے دفتر سے جاری ہونے والے ایک اعلان میں کہا گیا کہ شناخت کیے جانے والے شخص کا نام اس کے خاندان کی درخواست پر ظاہر نہیں کیا جا رہا۔نیویارک کے دہشت گرد حملوں میں ہلاک ہونے والوں میں سے مارچ 2015 کے بعد یہ پہلی شناخت کا اعلان ہے جبکہ حملوں میں ہلاک ہونے والوں میں سے 1641 افراد کو شناخت کیا جا چکا ہے، جس کا مطلب یہ ہے کہ 11 ستمبر کو ورلڈ ٹریڈ سینٹر کے ٹاوروں سے مسافر طیاروں کے ٹکرانے کے بعد آتشزدگی اور ان کے گرنے سے ہلاک ہونے والوں میں سے 40 فیصد افراد کی شناخت کا ابھی تک تعین نہیں کیا جا سکا۔

ادارے کا کہنا تھا کہ رواں سال کے شروع میں ڈی این اے کی زیادہ ترقی یافتہ ٹیکنالوجی کی مدد سے اس تازہ ترین شناخت میں مدد ملی ہے جبکہ اس سے قبل ڈی این اے ٹیسٹ کے نتائج نہیں نکل سکے تھے۔ٹریڈ سینٹر منہدم ہونے کے بعد گراؤنڈ زیرو سے تقریباً 22 ہزار انسانی باقیات کے نمونے حاصل کیے گئے تھے۔ اور انہیں متعلقہ خاندانوں کے حوالے کرنے کے لیے 2001 سے شناخت سے سلسلے میں ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں۔واضح رہے کہ 11 ستمبر 2001 کو نیویارک، پینٹاگان اور پنسلوانیا میں مسافر طیاروں کے ذریعے حملوں میں تقریباً 3 ہزار افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...