سڑک کنارے باربی کیو بیچتا شخص، ایک دن گوشت ٹیسٹ کروایا گیا تو انسانی گوشت نکلا، یہ کہاں سے لایا کرتا تھا؟ جواب اتنا خوفناک کہ کوئی انسان تصور بھی نہیں کرسکتا

سڑک کنارے باربی کیو بیچتا شخص، ایک دن گوشت ٹیسٹ کروایا گیا تو انسانی گوشت ...
سڑک کنارے باربی کیو بیچتا شخص، ایک دن گوشت ٹیسٹ کروایا گیا تو انسانی گوشت نکلا، یہ کہاں سے لایا کرتا تھا؟ جواب اتنا خوفناک کہ کوئی انسان تصور بھی نہیں کرسکتا

  



نیویارک(نیوز ڈیسک) دنیا نے ایک سے بڑھ کر ایک خطرناک مجرم دیکھا ہوگا لیکن امریکی سیریل کلر جوزف روئے میتھنی جیسا سفاک درندہ شاید ہی کبھی روئے ارض پر موجود رہا ہو۔یہ ایک ایسا جنونی قاتل تھا جو لوگوں کو اغوا کرنے کے بعد قتل کرتا اور پھر ان کے جسم کے ٹکڑے کرکے سڑک کنارے اپنے باربی کیو سٹال پر ان کا گوشت بھون کر بیچ دیتا تھا۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق1990ءکی دہائی میں بالٹی مور شہر میں اس درندے کی وجہ سے ایسا خوف و ہراس پھیلا کہ لوگ اپنے گھروں سے باہر نکلتے ہوئے ڈرنے لگے تھے۔ اس کے باربی کیو کی لرزہ خیز حقیقت سامنے آنے کے بعد جب اسے گرفتار کیا گیا تورونگٹے کھڑے کر دینے والے مزید انکشافات سامنے آئے۔ جوزف نے 23 سالہ لڑکی کیتھی سپائسر، 39 سالہ خاتون کیتھی این اور دیگر دو خواتین کو قتل کرنے کا اعتراف کیا۔ اس نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ اس نے خواتین کو قتل کرنے کے بعد ان کا گوشت بنایا اور پھر اسے باربی کیو سٹال پر بھون کر فروخت کردیا تھا۔

’میری پیدائش کے فوراً بعد تم نے میرے ساتھ یہ کام کیا‘ 28 سالہ نوجوان عدالت پہنچ گیا، جہاں پیدا ہوا اس ہسپتال کے خلاف ایسی درخواست دے دی کہ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

جنونی درندے نے پولیس کو بتایا کہ جب اس کی بیوی گھر سے بھاگ گئی تو اس کے سر پر جنون سوار ہو گیا تھا۔ اس نے اپنے جنون کی تسکین کے لئے خواتین کو اغواءکرنے اور پھر انہیں قتل کر کے ان کا گوشت بھون کر بیچنا شروع کر دیا۔ سفاک درندے نے پہلا قتل 1994ءمیں کیا۔ وہ نوجوان لڑکی کیتھی کو بہلا پھسلا کر اپنے گھر لایا اور پہلے اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی اور پھر اس کے جسم کے ٹکڑے کر ڈالے۔ اس پر بھی سکون نہ آیا تو ا س کا گوشت جانوورں کے گوشت میں مکس کر کے اپنے باربی کیو سٹال پر لے گیا اور وہاں اس کے کباب بنا کر گاہکوں کو کھلا دئیے۔ اس پہلے قتل کے بعد اس نے متعدد اور خواتین کے ساتھ بھی یہی لرزہ خیز سلوک کیا۔ عدالت نے اسے دو بار عمر قید کی سزا سنائی تھی لیکن گزشتہ روز میرلین کی جیل میں اس بدبخت کی موت ہو گئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...