عراق، داعش کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے 550 افراد کی اجتماعی قبردریافت

عراق، داعش کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے 550 افراد کی اجتماعی قبردریافت
عراق، داعش کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے 550 افراد کی اجتماعی قبردریافت

  



بغداد(آئی این پی )عراق میں داعش کے ہاتھوں ہلاک ہونیوالے 550 افراد کی اجتماعی قبر منظر عام پر آ گئی۔

قطرکی جانب سے طالبان کی مدد کے ٹھوس شواہد ہیں:سعودی عرب

غیر ملکی میڈیا کے مطابق عراق کے شہر تکرت میں سال 2014 میں دہشت گرد تنظیم داعش کی طرف سے ہلاک کئے جانے والے 550 افراد کی لاشیں منظر عام پر آ گئی ہیں جبکہ حکام کا کہنا ہے کہ ہمارے اندازے سے زیادہ لاشیں اس اجتماعی قبرمیں موجود ہیں اوریہ اجتماعی قبر امریکی ائیر بیس "سپیشر کیمپ" میں ہلاک کئے جانے والے عراقیوں کی ہے۔ہشدی شابی کے تجربہ کار کمانڈروں میں سے معین کاظمی نے کہا ہے کہ 550 مقتولین کے کنبوں کو مطلع کر دیا گیا ہے اور لاشوں میں سے 200 کا ڈی این اے ٹیسٹ کیا جائے گا۔کاظمی نے کہا ہے کہ 150 مقتولین کی لاشیں 2 ہفتے قبل نکالی گئی ہیں ۔واضح رہے کہ 12 جون 2014 کو داعش کے دہشت گردوں نے تکرت میں واقع سپیشر فوجی اسکول سے سینکڑوں نوجوان فوجیوں کو اغوا کر لیا تھا اور ایک ہزار700 کے قریب فوجیوں کو ہلاک کر دیا تھا۔جس وقت حملہ کیا گیا اس وقت کیمپ میں 4 ہزار طالبعلم موجود تھے۔

مزید : عرب دنیا


loading...