لاہور ہائیکورٹ کے پانچویں نوٹس پربھی معطل کرکٹرکا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا جواب نہ دیا گیا،وزارت داخلہ کو 15اگست تک مزیدمہلت دے دی گئی

لاہور ہائیکورٹ کے پانچویں نوٹس پربھی معطل کرکٹرکا نام ای سی ایل میں شامل ...
لاہور ہائیکورٹ کے پانچویں نوٹس پربھی معطل کرکٹرکا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا جواب نہ دیا گیا،وزارت داخلہ کو 15اگست تک مزیدمہلت دے دی گئی

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)وزارت داخلہ اور پی سی بی لاہور ہائیکورٹ کے پانچویں مرتبہ نوٹس کے بعد بھی میچ فکسنگ کے الزام میں معطل کرکٹرشاہ زیب کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کے خلاف درخواست میں جواب داخل نہ کروا سکی، عدالت نے جواب داخل کرانے کے لئے وزارت داخلہ اور پی سی بی کو15اگست تک مہلت دے دی ہے۔

لاہور ہائیکورٹ نے کمشنر ان لینڈ ریونیو کو نجی کمپنیوں کا آڈٹ کرنے سے روک دیا

جسٹس محمد یاور علی نے کرکٹر شاہ زیب کی درخواست پر سماعت کی، تو سرکاری وکیل کی طرف سے عدالت سے استدعا کی گئی کہ وزارت داخلہ اور پی سی بی کی طرف سے جواب داخل کرانے کے لئے مہلت دی جائے جس پر عدالت نے مزید سماعت 15اگست تک ملتوی کر دی، عدالت نے کہا کہ  آئندہ سماعت پر کرکٹر کے خلاف وہ تمام ریکارڈ پیش کریں جس کی روشنی میں ان کانام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کیا گیا۔ کرکٹر کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ آئین کے آرٹیکل 10(اے )کے تحت کسی بھی شہری کو شفاف ٹرائل کے بغیر مجرم نہیں گردانا جا سکتا نہ ہی اس کے خلاف قانون کے برعکس کوئی کارروائی عمل میں لائی جا سکتی ہے لیکن میچ فکسنگ کیس ٹربیونل میں زیر سماعت ہونے کے باوجود پی سی بی کے ایماءپر وزارت داخلہ نے شاہ زیب کا نام غیر قانونی طور پر ای سی ایل میں شامل کردیا ہے ،عدالت نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا حکم دے۔

مزید : لاہور