ڈریپ جعلی اور غیر معیاری ادویات کے خاتمے کیلئے پر عزم،ترجمان

    ڈریپ جعلی اور غیر معیاری ادویات کے خاتمے کیلئے پر عزم،ترجمان

اسلام آباد(آئی این پی)ترجمان ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان نے کہا ہے کہ  وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کی ہدایت پر اصلاحات کا سلسلہ تیزی سے جاری ہے اس سلسلے میں ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کو عالمی معیار کی اتھارٹی بنانے کے لئے اہم اقدامات کیے جا رہیں اس سلسلے میں ڈریپ کے پالیسی بورڈ نے اپنی ایک حالیہ میٹنگ میں غیر معیاری اور جعلی ادویہ کی روک تھام کے لئے  25 فیڈرل ڈرگ انسپکٹرز کی نئی آسامیوں کی منظوری دی ہے جنکی تعیناتی پورے پاکستان میں کی جائے گی۔ ڈریپ ملک سے جعلی اور غیر معیاری ادویات کے خاتمے کے لیے پر عزم ہے اور نئے ڈرگ انسکپٹرز کی آسامیوں کی منظوری اس سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ عوام الناس کو معیاری ادویات کی فراہمی ڈریپ کی اولین ترجیح ہے۔ ترجمان نے مزید کہا  انسپکٹرز کی جدید معیار اور عالمی طریقہ کار برائےGMP پر تربیت کی پالیسی مرتب کر لی گئی ہے۔ ڈریپ  اتھارٹی کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے ادویہ کی آن لائن رجسٹریشن اور فیس کی ادائیگی کا سسٹم IRIMS متعارف کرایا گیا ہے جس سے فیس ادائیگی اور فارماسوٹیکل کی رجسٹریشن کا طریقہ کار تیز تر ہو جائے گا۔اس سوفٹ وئیر کے استعمال سے ڈریپ کی کارگردگی میں بہتری اور شفافیت میں اضافہ ہو گا۔ ڈریپ نے ملک بھرکی فارماسوٹیکل کمپنیوں کی اس سسٹم کو استعمال کرنے کے طریقہ کا  ر پر تربیت کا مرحلہ مکمل کرلیا۔

ترجمان ڈریپ

مزید : صفحہ آخر


loading...