فرنٹ فٹ نوبال کا فیصلہ تھرڈ امپائر کو کرنے کی آزمائش

  فرنٹ فٹ نوبال کا فیصلہ تھرڈ امپائر کو کرنے کی آزمائش

دبئی(یواین پی)کرکٹ کے کھیل میں جلد ہی فرنٹ فٹ نوبال کے فیصلے کا مکمل اختیار تھرڈ امپائر کو حاصل ہو جائے گا اگر اس سلسلے میں کی جانے والی آزمائش کامیاب ثابت ہوئی۔آئی سی سی نے آئندہ چھ ماہ کے عرصے میں کھیلی جانے والی محدود اوورز کی سیریز کو اس حوالے سے پیمانہ بنا لیا ہے جس کے دوران اگلے قدم کی نوبال کے فیصلے آن فیلڈ امپائرز کے بجائے تھرڈ امپائر کرے گا۔واضح رہے کہ 2016ءمیں بھی پاکستان بمقابلہ انگلینڈ سیریز کے دوران اس نظام کی آزمائش کی گئی تھی تاہم اس بار اسے وسیع تناظر میں دیکھتے ہوئے رائج کیا جائے گا۔آئی سی سی جنرل منیجر کرکٹ آپریشنز جیف آلرڈائس کے مطابق یہ تجربہ ماضی میں بھی کیا گیا تھا البتہ اس مرتبہ وہی ٹیکنالوجی وسیع بنیادوں پر استعمال کی جائے گی۔نئے آئیڈیا کے مطابق تھرڈ امپائر کو نوبال ہوتے ہی بالر کے اگلے قدم کا امیج چند سیکنڈز میں موصول ہوجائے گا جو آن فیلڈ امپائر سے رابطہ کرکے اسے آگاہ کرے گا کہ نوبال پھینکی گئی ہے اور یوں جب تک امپائر سے رابطہ نہیں کیا جاتا پھینکی جانے والی ہر بال فیئر ڈلیوری سمجھی جائے گی۔

آئی سی سی کے مطابق جب 2016ء میں اس سسٹم کی آزمائش کی گئی تو بالر کا پاو¿ں پڑنے کے آٹھ سیکنڈز میں آن فیلڈ امپائر تک نوبال سے متعلق پیغام ارسال کردیا جاتا تھا لیکن اسے اب مزید بہتر بنانے کی کوشش کی گئی ہے اور تھرڈ امپائرز تیز رفتاری کے ساتھ اس کا استعمال کر سکیں گے۔کرکٹ کمیٹی نے سفارش کی ہے کہ یہ طریقہ کار ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میچوں کے دوران آزمایا جائے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...