نیشنل بینک کا ڈیجیٹل طریقہ کار سے رقوم منتقلی کیلئے ورلڈ ریمٹ سے معاہد ہ

نیشنل بینک کا ڈیجیٹل طریقہ کار سے رقوم منتقلی کیلئے ورلڈ ریمٹ سے معاہد ہ

کراچی (اکنامک رپورٹر)اسلام آباد اور لندن، ممتاز ڈیجیٹل منی ٹرانسفر سروس ورلڈ ریمٹ اور نیشنل بینک آف پاکستان نے 1500سے زائد نیشنل بینک آف پاکستان (NBP)کیش پک اپ لوکیشنز اور پاکستان پوسٹ آفس کی مقررہ برانچوں کو رقوم کے تیز رفتار اور سستے انٹرنیشنل ٹرانسفرز کی سہولت متعارف کرائی ہے۔ 50سے زائد ممالک، بشمول امریکا، برطانیہ، کینیڈا اور آسٹریلیا میں مقیم پاکستانی تارک وطن اب اپنے اسمارٹ فون استعمال کرکے این بی پی کیش پک اپ لوکیشنز کو رقم بھیج سکتے ہیں۔ ورلڈ ریمٹ کسٹمرزکو زیرو فیس پر رقم کی پاکستان* منتقلی (شرائط و ضوابط لاگو) کی بھی پیشکش کرتا ہے۔  آن لائن منی ٹرانسفرز میں ورلڈ ریمٹ ایک گلوبل لیڈر ہے۔ورلڈ ریمٹ کسٹمرز کا وقت اور رقم بچاتا ہے کیوں کہ انہیں گھر رقم بھیجنے کے لیے منی ٹرانسفر ایجنٹ کو بھاری فیس ادا نہیں کرنی پڑتی۔ کمپنی کے 90%سے زائد ٹرانسفرز کو 10منٹوں کے اندر منظوری مل جاتی ہے۔ نیشنل بینک آف پاکستان، پاکستان میں حکومت کی ملکیت ایک ممتاز بینک، تمام آمدنیوں والے طبقوں تک مالیاتی خدمات کی رسائی کو آسان بنانے کے لیے پُر عزم ہے۔نیشنل بینک آف پاکستان، اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی طرف سے بینکاری نہ کرنے والے افراد تک مالیاتی شمولیت کو فروغ دینے کی نیشنل فنانشل انکلوژن اسٹریٹجی کے لیے بھی فرنٹ لائن کی حیثیت رکھتا ہے۔ بینک نے حال ہی میں مختلف صنعتوں میں ایس ایم ای کاروباروں کے لیے خصوصی کریڈٹ اسکیمیں بھی متعارف کرائی ہیں اور طلبہ کو قرض حسنہ پیش کررہاہے۔پاکستان لگ بھگ 7.6ملین بیرونِ ملک مقیم پاکستانیوں کے ساتھ دنیا میں چھٹی سب سے بڑی تارک وطن آبادی رکھتا ہے۔ ورلڈ بینک کے مطابق پاکستان نے 2018میں 20ارب ڈالر سے زائد ریمیٹینسز وصول کیے جو ملک کے جی ڈی پی کا لگ بھگ7فی صد بنتے ہیں۔  عارف عثمانی، صدر نیشنل بینک آف پاکستان کا کہنا ہے ”ریمٹینسز پاکستان کی معیشت میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ یہ غیرملکی زرِ مبادلہ کا واحد سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ موجودہ حکومت نے بیرون ِ ملک پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے ساتھ ساتھ ہوم ریمیٹینسز پر خصوصی توجہ مرکوزکررکھی ہے۔ حکومت کے نصب العین کے مطابق نیشنل بینک آف پاکستان میں ہم بیرونِ ملک مقیم پاکستانیوں کو ملک کی ترقی میں حصہ داربننے میں مدد فراہم کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کررہے ہیں۔ ہم ریمیٹینس کے کاروبار کو اپنی قومی ذمہ داری سمجھتے ہیں۔“ ”نیشنل بینک آف پاکستان کا برانچ نیٹ ورک پورے ملک میں پھیلا ہوا ہے۔ پاکستان پوسٹ آفسز کے ساتھ حالیہ اشتراک کے بعد ریمیٹینس کی ادائیگیوں کے لیے نیشنل بینک سب سے بڑے نیٹ ورک کا حامل ہوجائے گا۔ نیشنل بینک آف پاکستان کو لاکھوں کسٹمرز کا اعتماد بھی حاصل ہے اور تمام پاکستانی بینکوں میں سب بڑی کسٹمربیس (اکاؤنٹ ہولڈرز) رکھتا ہے۔ 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...