جمہوریت اور انسانی حقوق کا تحفظ کرنیوالے اپنی ذات کا دفاع کر رہے ہیں: بلاول بھٹو

  جمہوریت اور انسانی حقوق کا تحفظ کرنیوالے اپنی ذات کا دفاع کر رہے ہیں: بلاول ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہاہے کہ بدقسمتی سے جمہوریت اور انسانی حقوق کا تحفظ کرنے والے اپنی ذات کا دفاع کررہے ہیں ہم ہر 10 سال بعد جمہوریت سے فسطائی ریاست بننے کی طرف جاتے ہیں، انسانی حقوق کے تحفظ کے بغیر قومی سلامتی ممکن نہیں ہو سکتی۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک تھنک ٹینک کی تقریب سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ ہمیں قومی سلامتی کی ریاست کے بجائے حقوق دینے والی ریاست بننا ہوگا۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ریاست کا لوگوں سے تعلق ہے،لوگوں کا تعلق لوگوں سے نہیں ہے۔ ہمیں ہر پاکستانی کو سمجھانا ہوگا کہ ہمارے مسئلہ کا حل جمہوریت ہے۔جمہوریت میں بھی بہتری کی امید رہتی ہے۔ غیر جمہوری قوتیں جمہوریت کو کمزور کرتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنے اداروں کے ہاتھوں کا کھلونا بنتے ہیں۔ہمیں اپنے حقوق پر سمجھوتا نہیں کرنا چاہئے،ہم نے بطور سیاست دان پارلیمنٹ کو ناکام کیا ہے۔ عدلیہ ڈیم بنانے میں مصروف رہی پر عدلیہ کو انسانی حقوق کی خلاف ورزی نظر نہیں آئی۔انہوں نے کہا کہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی جارہی ہے۔ ہمیں پاکستانیوں اور کشمیریوں کے انسانی حقوق کا تحفظ کرنا چاہئے۔ جمہوریت کے چیمپئن انسانی حقوق سے متعلق سمجھوتہ کررہے ہیں۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ انسانی حقوق کا تحفظ سیکورٹی کے بغیر ممکن نہیں ہے۔ پیپلزپارٹی کی حکومت میں انسانی حقوق کا تحفظ کیا جاتا تھا۔ بدقسمتی سے جمہوریت اور انسانی حقوق کا تحفظ کرنے والے اپنی ذات کا دفاع کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کے معاشی حقوق پر سمجھوتہ کیا جارہا ہے۔ جمہوری قوتوں کو سمجھنا چاہیے کہ کشمیر کے لوگ اپنے حقوق پر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول


loading...